باپ نے بیٹی کو قتل کردیا، ماں نے لاش سوٹ کیس میں رکھنے میں مدد کی

22 سالہ آیوشی نے والدین کی مرضی کے خلاف پسند کی شادی کی تھی

پسند کی شادی کرنے پر باپ نے بیٹی کو قتل کردیا۔ لڑکی کی ماں نے لاش کو ٹھکانے لگانے کیلئے سوٹ کیس میں رکھنے میں شوہر کو مدد فراہم کی۔

بھارتی پولیس کے مطابق ریاست اترپردیش میں ماں باپ نے پسند کی شادی کرنے پر اپنی ہی بیٹی کو فائرنگ کرکے قتل کردیا، 22 سالہ آیوشی چوہدری کی لاش گزشتہ جمعہ کو یمنا ایکسپریس وے پر ایک لال رنگ کے بڑے سوٹ کیس سے ملی تھی۔

پولیس کے مطابق لڑکی نے اپنے والدین کی مرضی کے خلاف مختلف ذات سے تعلق رکھنے والے لڑکے سے شادی کی تھی جس پر اسکے والد نے طیش میں آکر اسکی جان لے لی۔

لڑکی کو قتل کرنے کے بعد باپ نے اسکی لاش سوٹ کیس میں بند کرکے ماتھورا کے علاقے میں پھینک دی، لڑکی کی ماں نے بھی لاش کو سوٹ کیس میں بند کرنے میں اپنے شوہر کی مدد کی۔

لوگوں نے مشتبہ سوٹ کیس کی اطلاع پولیس کو دی تو اس میں سے لاش برآمد ہوئی، لڑکی کا چہرا خون سے لت پت تھا اور اسکے جسم پر بھی تشدد کے نشانات تھے۔

پولیس نے لاش ملنے کے بعد سی سی ٹی وی فوٹیج کی مدد سے تفتیش اور لڑکی کے ورثا کی تلاش کیلئے اسکی تصاویر کی تشہیر کی تو لڑکی کے قاتل ماں باپ ہی اسکی شناخت کرنے پہنچ گئے۔

رپورٹ کے مطابق کیس میں بڑا بریک تھرو اس قت ہوا جب پولیس کو ایک نامعلوم فون کال پر قتل سے متعلق معلومات فراہم کی گئیں جس کی روشنی میں پولیس نے لڑکی کے والد سے تفتیش کی تو انہوں نے قتل کا اعتراف کرلیا۔

Honour Killing

Indian girl killed

Tabool ads will show in this div