لڑکے نے گرل فرینڈ کو قتل کرنے کے بعد لاش کے 35 ٹکڑے کرکے فریزر میں رکھ دیے

دونوں کو ممبئی میں ایک دوسرے سے محبت ہوئی تھی، خاندان والوں کی مخالفت پر دہلی چلے گئے

نئی دہلی میں ایک لڑکے اپنی گرل فرینڈ کو قتل کرنے کے بعد لاش کے 35 ٹکڑے کرکے فریزر میں رکھ دیے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق دونوں لڑکا لڑکی شادی کے بغیر ایک دوسرے کے ساتھ رہتے تھے، 26 سالہ شردھا واکر ممبئی میں ایک ملٹی نیشنل کمپنی کے کال سینٹر میں کام کرتی تھی جہاں اسکی 28 سالہ آفتاب امین پونا والا سے دوستی ہوئی پھر دونوں ایک دوسرے کو پسند کرنے لگے۔

خاندان والوں کی مخالفت پر دونوں ممبئی چھوڑ کر دہلی منتقل ہوگئے، ستمبر میں شردھا والکر کی ایک دوست نے اس کے بھائی کو بتایا کہ اس کا موبائل پچھلے دو ماہ سے بند ہے جس پر لڑکی کے والد معاملے کی چھان بین کرنے دہلی آئے اور اس فلیٹ کے دروازے پر تالا لگا دیکھا تو انہوں نے دہلی کے مہرولی پولیس اسٹیشن میں اپنی بیٹی کے اغوا کا مقدمہ درج کرایا۔

انہوں نے درخواست میں لکھا کہ انہیں شردھا والکر نے بتایا تھا کہ آفتاب امین اس پر اکثر تشدد کرتا تھا، اس درخواست کے بعد پولیس نے آفتاب امین کو گرفتار کیا تو اس نے قتل کا اعتراف کرلیا، ملزم نے تفتیش میں بتایا کہ دونوں کا اکثر جھگڑا ہوتا تھا کیونکہ شرادھا والکر مجھ سے شادی کا مطالبہ کرتی تھی۔

پولیس کے مطابق ملزم نے پانچ ماہ پہلے لڑکی کو قتل کیا اور لڑکی کی لاش کو کئی ٹکڑوں میں کاٹ کر دہلی کے مختلف علاقوں میں پھینک دیا۔ پولیس ذرائع کے مطابق آفتاب نے شردھا کی لاش کے 35 ٹکڑوں میں کاٹ کر اپنے گھر میں رکھا۔ اس کے لیے آفتاب نے ایک نیا بڑا فریج خریدا اور لاش کے ٹکڑے 18 دن تک گھر میں رکھے۔ رات 2 بجے وہ لاش کے ٹکڑوں کو پلاسٹک کے تھیلے میں ڈال کر پھینک دیتا تھا۔

پولیس نے آفتاب امین کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کر لیا ہے، پولیس کا کہنا ہے کہ جنگل سے لاش کے کچھ ٹکڑے برآمد کیے گئے ہیں لیکن یہ معلوم نہیں ہو سکا کہ یہ انسانی لاش کے ٹکڑے ہیں، اب تک لاش کے تقریباً 10 سے 15 ٹکڑے برآمد ہوئے ہیں۔

Man Killed Partner In Delhi

Delhi girl murder

Tabool ads will show in this div