جرمنی میں برطانوی سفارت خانے کے گارڈ کا روس کے لیے جاسوسی کا اعتراف

ڈیوڈ بیلنٹائن اسمتھ 2021 میں برلن سے گرفتار کیا گیا تھا

جرمنی میں واقع برطانوی سفارت خانے کے ایک گارڈ نے روس کے لیے جاسوسی کا اعتراف کرلیا ہے۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹس کے مطابق جرمنی کے دارالحکومت برلن میں واقع برطانوی سفارت خانے میں سیکیورٹی گارڈ کی ملازمت کرنے والے ڈیوڈ بیلنٹائن اسمتھ نامی شخص کو2021 میں روس کے لیے جاسوسی کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔

جرمن پولیس نے ڈیوڈ بیلنٹائن اسمتھ کو برطانیہ کے حوالے کردیا تھا۔ جہاں اس کے خلاف مقدمہ زیر سماعت تھا۔

عدالت میں سماعت کے دوران 58 سالہ ڈیوڈ بیلنٹائن اسمتھ نے 8 جرائم کا اعتراف کیا ہے۔

اسمتھ نے گزشتہ ہفتے عدالت کے سامنے اکتوبر اور دسمبر 2020 کے درمیان برطانیہ کے سرکاری ملازمین کے بارے میں معلومات برلن میں روسی ملٹری اتاشی میجر جنرل سرگئی چکوروف کو دینے کا الزام قبول کیاتھا۔ بعد ازاں اس نے 7 دیگر الزامات کا بھی اعتراف کیا۔

دوران سماعت سرکاری وکلا نے موقف اختیار کیا کہ ڈیوڈ بیلنٹائن اسمتھ جرمنی میں اپنے وسائل سے رہتا تھا، وہ برطانوی سفارت خانے میں 8 برس سے منسلک تھا۔ اسے برطانوی سفارت خانے کے اقدامات پر شدید تحفظات تھے، خاص طور پر سفارت خانے کی جانب سے ہم جنس پرستوں (LGBTQ+ ) کی حمایت میں ان کا قوس و قزح کا پرچم لہرائے جانے پر شدید اختلافات تھے، اسی وجہ سے اس نے روس کو اپنی خدمات پیش کیں۔

UK

spying for Russia

Tabool ads will show in this div