دادو: بارشوں اور سیلاب کے بعد جوھی میں ملیریا بے قابو

اقدامات نہ ہونے کی وجہ سے علاقہ مکین تشویش کا شکار ہیں

بارشوں اور سیلاب کے بعد دادو کی تحصیل جوھی میں ملیریا بے قابو ہوگئی اور صرف ایک ہی گاؤں بھکر جمالی میں ملیریا سمیت دیگر بیماریوں نے 21 جانیں نگل لی۔

محکمہ صحت کی جانب سے اقدامات نہ ہونے کی وجہ سے علاقہ مکین تشویش کا شکار ہیں۔ مقامی سماجی رہنما اکبر لاشاری کا کہنا ہے کہ آئے روز کوئی نہ کوئی ملیریا سے فوت ہوتا ہے مگر محمکہ صحت غیر سنجیدہ دکھائی دے رہی ہے۔

مقامی افراد نے ڈسٹرکٹ ہیلتھ افسر کو صورتحال سے آگاہ کیا اور درخواست کی کہ کراچی یا حیدرآباد سے خصوصی ٹیم علاقے میں بھیجی جائے تاکہ اموات کا سبب معلوم ہوسکے۔

دوسری جانب فوکل پرسن ڈاکٹر ایوب میمن کا کہنا ہے کہ ڈی ایچ او کی ہدایت پر بکھر جمالی گاؤں میں کیمپ لگائی گئی تھی جہاں چمڑی، غذائی قلت، ملیریا، خارش اور حاملہ خواتین میں غذائی کے کیسز سامنے آئے۔

محکمہ صحت سندھ کے حکام کے مطابق صورتحال کاجائزہ لینے کیلئے خصوصی ٹیمیں تشکیل دی جارہی ہیں۔

Sindh Government

FLOOD 2022

Tabool ads will show in this div