پاکستان میں تعلیم کی صورت حال؛ اقوام متحدہ کی رپورٹ میں انکشافات

پاکستان میں 54 فیصد طلبہ نجی اداروں میں تعلیم حاصل کرنے پر مجبور

اقوام متحدہ کے ذیلی ادارے یونیسکو نے اپنی رپورٹ میں پاکستان میں تعلیم کی صورتحال کا بھانڈا پھوڑ دیا ہے۔

یونیسکو نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ پاکستان میں سرکاری تعلیمی اداروں کی کمی کے باعث نجی تعلیمی اداروں میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے، نجی تعلیمی اداروں کے فروغ سے سرکاری تعلیمی اداروں کو حقارت سے دیکھا جارہا ہے۔

اقوام متحدہ کی رپورٹ کے مطابق دنیا میں 27 فیصد طلبا نجی تعلیمی اداروں میں زیر تعلیم جب کہ پاکستان میں یہ تعداد دگنی ہے، پاکستان میں غیر رجسٹرڈ نجی اسکولوں کی تعداد بھی بہت زیادہ ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ایک تہائی سے زیادہ طلبا نجی تعلیمی اداروں میں زیر تعلیم ہیں نجی تعلیمی اداروں کے 45 اور سرکاری اسکولوں کے 25 فیصد طلبا ٹیوشن سینٹر بھی جاتے ہیں۔

اقوام متحدہ کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ پاکستان کے سرکاری تعلیمی اداروں میں 92 طلبا کے لیے ایک استاد ہے۔

رپورٹ کے مطابق ملک میں میٹرک کے 59 فیصد طلبا اسکولوں کے علاوہ مختلف اکیڈمیز بھی جاتے ہیں، پاکستان میں اکیڈمیزاور ٹیوشن سینٹر کی فیس اضافی بوجھ ہیں۔

education in pakistan

Tabool ads will show in this div