وزیر آباد فائرنگ حملے کے مرکزی ملزم کا سہولت کار گرفتار

مرکزی ملزم نے زیرحراست شخص کی دکان پرموٹر سائیکل کھڑی کی تھی

تحریک انصاف کے کینٹنر پر فائرنگ کے واقعے میں ملوث ایک اور ملزم کو پولیس نے گرفتار کرلیا۔

وزیرآباد میں تحریک انصاف کے کینٹینر پر فائرنگ کرنے والے مرکزی ملزم کی سہولت کاری میں ملوث اور ملزم کو تحقیقاتی اداروں نے حراست میں لے لیا۔

تحقیقاتی ذرائع کا کہنا ہے کہ فائرنگ کرنے والے مرکزی ملزم ملزم نوید نے زیرحراست شخص کی دکان پرموٹر سائیکل کھڑی کی تھی، اور واقعے کے بعد اسی دکان پر آنے کی کوشش میں گرفتار ہوگیا۔

دوسری جانب وزیرآباد میں چیئرمین تحریک انصاف عمران خان پر حملے کی تفتیش ملزم، مشتبہ افراد کی گرفتاری اور بیان پر ہی رک گئی ہے، اور48 گھنٹے گزر جانے کے بعد بھی واقعے کا مقدمہ درج نہ ہوسکا۔

تفتیشی افسران کے مطابق واقعے کا مقدمہ درج نہ ہونا تفتیش کی راہ میں رکاوٹ بن گیا ہے، جب کہ واقعے پر جے آئی ٹی کی تشکیل بھی رک گئی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پنجاب حکومت دہشت گردی کے مقدمے کے اندراج کے لیے اپنے اختیارات بھی استعمال نہیں کرسکی بلکہ کترا رہی ہے۔

واقعے کا پس منظر

واضح رہے کہ 9 اکتوبر کو وزیرآباد کے اللہ والا چوک پر چئیرمین تحریک انصاف پر اس وقت گولیاں چلائی گئیں جب ان کا قافلہ استقبالیہ کیمپ کی طرف بڑھ رہا تھا۔

حملے میں ایک کارکن جاں بحق اور عمران خان، سینیٹر فیصل جاوید اوراحمد چٹھہ سمیت کئی افراد زخمی بھی ہوئے، جن کی حالت اب خطرے سے باہر ہے۔

حملے کے بعد کنٹینر پر کھڑے گارڈ نے بھی گولی چلائی جس کے بعد بھگدڑ مچی تھی، اور 15 افراد زخمی ہوگئے۔

PTI long march

imran khan firing

long march firing

Tabool ads will show in this div