شاتم رسول سلمان رشدی نشان عبرت بن گیا، ایک آنکھ اور ہاتھ ضائع

یہ ایک وحشیانہ حملہ تھا، ملعون کے ایجنٹ کا ہسپانوی اخبار کو انٹرویو

چاقو حملے میں زخمی شاتم رسول ملعون سلمان رشدی نشان عبرت بن گیا۔

سلمان رشدی کے ایجنٹ اینڈریو وائلی کے مطابق بھارتی نژاد گستاخ رسول کی ایک آنکھ اور ہاتھ ضائع ہوگیا ہے، اس حملے میں ملعون شاتم رسول کی گردن پر تین شدید زخم لگے تھے اور بازو کے اعصاب کٹ گئے تھے۔

سلمان رشدی پر 12 اگست 2022 کو امریکی شہر نیویارک میں ایک لیکچر کے دوران 24 سالہ ایرانی نژاد نوجوان ہادی مطر نے اُس وقت حملہ کیا تھا جب وہ تقریب سے خطاب کیلئے اسٹیج پر پہنچا، سلمان رشدی کو شدید زخمی حالت میں ہیلی کاپٹر کے ذریعے اسپتال منتقل کیا گیا تھا۔

ایران کے سابق روحانی پیشوا آیت اللہ خمینی نے رشدی کے قتل کا فتویٰ جاری کیا تھا جس کی وجہ سے وہ روپوشی کی زندگی گزار رہا تھا، پیغمبر اسلام کے خلاف توہین آمیز کتاب لکھنے پر گستاخ سلمان رشدی پر پہلے بھی حملے کئے جاچکے ہیں۔

رشدی کے ایجنٹ ایجنٹ اینڈریو وائلی نے ہسپانوی اخبار ایل پیس کو انٹرویو میں بتایا کہ ان کے سینے اور دھڑ پر تقریباً 15 مزید زخم ہیں اور یہ ایک وحشیانہ حملہ تھا تاہم وائلی نے یہ بتانے سے انکار کر دیا کہ آیا سلمان رشدی ہسپتال میں ہی ہیں یا گھر منتقل کردیا گیا ہے۔

انٹرویو میں وائلی سے پوچھا گیا کہ وہ آرٹ سپیلگل مین کے پلٹزر انعام یافتہ گرافک ناول ماؤس پر امریکا کے کچھ اسکولوں میں پابندی پر کیا کہتے ہیں تو انہوں نے کہا کہ یہ مضحکہ خیز ہے، دائیں بازو کے مذہبی ویسا ہی کر رہے ہیں جیسی ان سے توقع ہوتی ہے لیکن اب یہ ملک میں ایک بڑی طاقت ہے۔

SALMAN RUSHDIE

Tabool ads will show in this div