مین پوری اور گٹکا بیچنے والوں کی شامت آگئی

عدالت کامین پوری،گٹکے،مضرصحت پان مصالحہ کی فروخت پرپابندی یقینی بنانےکاحکم

سندھ ہائیکورٹ نے مین پوری، گٹکے، مضرصحت پان مصالحہ کی فروخت پرپابندی یقینی بنانے کا حکم دےدیا۔

سندھ ہائی کورٹ میں رجسٹرار ٹریڈ مارک کی جانب سے مضرصحت اشیا کے حوالے سے رپورٹ پیش کردی گئی۔

رپورٹ میں بتایا گیا کہ 2 لاکھ سے زائد ٹوبیکو ٹریڈ مارک سرٹیفیکیٹ جاری کیے ہیں تاہم یہ بتانے کی پوزیشن میں نہیں ہیں کہ ٹوبیکو پان مصالحہ کو کتنے سرٹیفیکیٹ جاری کیے گئے ہیں، البتہ آئندہ سماعت پر ریکارڈ کی اسکروٹنی کرکے رپورٹ جمع کروادی جائے گی۔

رپورٹ میں بتایا گیا کہ 50 سرٹیفیکیٹ ایسےجاری کیےگئےجو بظاہرٹوبیکو پان مصالحہ سے متعلق ہیں۔

عدالت نے رپورٹ کی کاپی اسسٹنٹ اٹارنی جنرل ،ایڈووکیٹ جنرل اور درخواست گزار کو فراہم کرنے کی ہدایت کی۔

سندھ ہائی کورٹ نے چھالیہ کےاستعمال اور فروخت سےمتعلق وفاقی اور صوبائی حکومتوں کے وکلاءسےدلائل طلب کرلئے۔

عدالت کی جانب سے سیکرٹری لوکل گورنمنٹ اورآئی جی سندھ کو مضرصحت اشیافروخت کرنے والوں کے خلاف کارروائی کی ہدایت کی گئی ہے۔

آئی جی سندھ کوعدالتی احکامات پرعملدرآمد کراکے رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیا۔عدالت نے درخواست کی مزید سماعت 29 اکتوبر تک ملتوی کردی۔

SINDH HIGH COURT

SINDH DRUG CONTROL AUTHORITY

Tabool ads will show in this div