24 دن میں ڈالر 24 روپے کم ہوسکتا ہے، اسحاق ڈار

62 ون ایف کے معاملے کو پارلیمنٹ میں لےکر جائیں گے،اسحاق ڈار

وزیرخزانہ اسحاق ڈار کا کہنا ہے کہ سیاسی عدم استحکام کی وجہ سے ڈالر240 روپے تک گیا ورنہ ڈالرکی قدر200سے اوپر نہیں ہے۔

سماء کے پروگرام ندیم ملک لائیو میں گفتگو کرتے ہوئے اسحاق ڈار کا کہنا تھا کہ ہمیشہ سے ڈی ویلیوایشن کیخلاف رہاہوں،،ڈالر جلد 200 روپے سے نیچے آئے گا۔

وزیرخزانہ کا کہنا تھا کہ پاکستان واپسی کیلئے جہاز میں بیٹھا تو ڈالر نیچے آنا شروع ہوگیا تھا جکہ گزشتہ پیرسے اب تک ڈالر18روپے نیچے آچکا۔

انہوں نے مزید کہا کہ 10 دن میں ڈالر کا گیپ ایک روپے پر آگیا ہے، 24 دن میں ڈالر 24 روپے کم ہوسکتا ہے۔

اسحاق ڈار کا کہنا تھا کہ ایکسچینج ریٹ کوفری فلوٹ پرہونا چاہیے مگر سسٹم کوفری فلوٹ نہیں چھوڑ سکتے،ایکشن لیں گے، ایکسچینج ریٹ کو مانیٹر کرنے کی ذمہ داری اسٹیٹ بینک کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ اکتوبرمیں پٹرول پر5روپے لیوی لگنی تھی، مہنگائی کی شرح12 سے14 فیصد تک لیکرآئیں گے۔ آئی ایم ایف کا پروگرام جون تک ہے، آئی ایم ایف کی شرائط اور پروگرام مکمل کریں گے۔

وزیرخزانہ نے کہا کہ پچھلی حکومت کے کیے گئے اقدامات ہم پرڈال دیے گئے، پیرس کلب کے قرضے ری شیڈول کروانا ترجیح نہیں، قرضے ری شیڈولنگ ہمارا آخری آپشن ہوگا۔

لیگی رہنما کا کہنا تھا کہ عمران خان خود کو ریاست سے اوپر سمجھتے ہیں، چیئرمین تحریک انصاف کو اس باردھرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ وزیرداخلہ راناثنا دھرنے کو روکنے کا فیصلہ قانون کے مطابق کریں گے۔

وزیرخزانہ کا کہنا تھا کہ چیئرمین نادرا، سیکریٹری ای سی پی کی تعیناتی عمران خان کی مرضی سے ہوئی، عمران خان کو کوئی پسندنہ آئے تواس پر تنقید شروع کردیتے ہیں۔ عمران خان کی پوری سیاست منفی ہے۔

اسحاق ڈار کا کہنا تھا کہ جسٹس ریٹائرڈ راناشمیم پر پریشرہوگا اس لیےانہوں نے اپنی جان چھڑائی مگر نوازشریف کے کیسز اب تک ختم ہوجانے چاہیے تھے۔ مزید کہا کہ نواز شریف کا کچھ علاج ابھی باقی ہے، واپس آتے ہی ان کے خلاف کیسز ہوا میں اڑجائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ 62 ایف ون کے معاملے کو پارلیمنٹ میں لےکر جائیں گے۔ تاحیات نااہلی قانون میں ترمیم کیلئے الیکشن ایکٹ میں ترمیم کافی ہے۔ مذکورہ ایکٹ میں ڈرافٹ لندن سے بناکر بھیجا ہوا ہے۔

اسحاق ڈار کا کہنا تھا کہ کوئی صادق وامین نہیں رہے تو اس پرآئین خاموش ہے،62 ایف ون کے بارے میں تو چیف جسٹس نے خود کہا کہ یہ غیر منصفانہ ہے۔

وزیرخزانہ اسحاق ڈار کا مزید کہنا تھا کہ ٹیکس دینے میں کبھی تاخیر نہیں کی، میرے خلاف بنایا گیا کیس جعلی ہے۔

Finance Minister Ishaq Dar

dollar price

Tabool ads will show in this div