اسرائیلی فورسز کی نہتے فلسطینیوں پر فائرنگ، 2 نوجوان شہید

نوجوانوں کو مقبوضہ مغربی کنارے میں نشانہ بنایا گیا
<p>فوٹو: جلازون مہاجر کیمپ میں شہید باسل قاسم کے گھر پر بچے رو رہے ہیں</p>

فوٹو: جلازون مہاجر کیمپ میں شہید باسل قاسم کے گھر پر بچے رو رہے ہیں

مقبوضہ مغربی کنارے کے علاقے میں اسرائیلی فورسز کی فائرنگ سے دو فلسطینی نوجوان شہید اور ایک زخمی ہوگیا۔

فلسطین کی سرکاری خبر ایجنسی وفا کے مطابق اسرائیلی فورسز نے مقبوضہ مغربی کنارے کے علاقے رام اللہ کے قریب جلازون مہاجر کیمپ پر چھاپے کے دوران کار میں سوار تین نوجوانوں کو فائرنگ کا نشانہ بنایا جس میں 2 موقع پر شہید ہوگئے جبکہ تیسرا شدید زخمی ہوا۔

شہید ہونے والے دو نوجوانوں کی شناخت 18 سالہ باسل قاسم اور خالد فادی کے نام سے کی گئی جبکہ زخمی کی شناخت 19 سالہ رافت حابش کے نام ے ہوئی۔

اسرائیلی فورسز نے مرنے والے دو نوجوانوں کی لاشوں کو اپنی تحویل میں لے لیا جبکہ تیسرے نوجوان کو زخمی حالت میں گرفتار کرلیا۔

اسرائیلی فورسز نے دعویٰ کیا ہے کہ تینوں نوجوان اسرائیلی فوجیوں کو کار سے کچلنے کا ارادہ رکھتے تھے جس پر فورسز نے ان پر فائرنگ کی۔

دوسری جانب فلسطینی شہداء کے اہلخانہ نے اسرائیلی فورسز کے اس الزام کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ 18 سالہ باسل قاسم ایک بیکری میں کام کرتا تھا جس کا دوسرا بھائی پہلے ہی اسرائیلی جیل میں قید ہے۔

فلسطینی وزارت صحت کے مطابق رواں سال اسرائیلی فورسز کے ہاتھوں 160 فلسطینی شہید کیے جاچکے ہیں جس میں اگست کے مہینے میں تین دن تک غزہ پر کی جانے والی بمباری کے 51 شہداء بھی شامل ہیں۔

Palestinian killing

OCCUPIED PALESTINE

Tabool ads will show in this div