حکومت اور کسانوں کے درمیان ڈیڈ لاک برقرار، احتجاج چھٹے روز بھی جاری

اتوار کی تعطیل کے باعث مذاکرات میں پیش رفت نہ ہو سکی

اسلام آباد میں حکومت اور کسانوں کے درمیان مذاکرات میں ڈیڈ لاک کے باعث مطالبات کے حق میں کسانوں کا احتجاج چھٹے روز بھی جاری ہے۔

کسان اتحاد کے رہنماوں کا کہنا ہے کہ کسان مہنگی بجلی، کھاد اور مہنگائی کے خلاف احتجاج کررہے، مطالبات کی منظوری تک احتجاج جاری رہے گا۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز وزیرداخلہ راناثناء اللہ کا کہنا تھا کہ یوب ویلز بلوں کی ادائیگی موخر کرنے کا مطالبہ تسلیم کیا جاچکا ہے جس کا نوٹیفیکیشن بھی جاری کردیا گیا ہے۔ اسلام آباد میں کسانوں کا دھرنا بلا جواز ہے۔

وزیرداخلہ نے کہا ریڈ زون ریڈ لائن ہے جہاں کسان یا کسی گروہ کو احتجاج کی اجازت نہیں، ریڈ زون کی طرف مارچ کرنے والوں کیخلاف قانون حرکت میں آئے گا۔

واضح رہے کہ 21 ستمبر کو کومت سے کامیاب مذاکات ہونے کے بعد کسان اتحاد نے اسلام آباد میں جاری احتجاج ختم کردیا تاہم مطالبات کے عدم منظوری کے باعث کسان 27 ستمبر سے دوبارہ اسلام آباد میں سراپا احتجاج ہیں۔

islamabad police

KISAN PROTEST

Tabool ads will show in this div