یوگنڈا میں ایبولا وائرس سے 5 افراد ہلاک ہوگئے

19 نئے کیسز کی تصدیق

افریقی ملک یوگنڈا میں مہلک ایبولا وائرس کے باعث 5 افراد ہلاک ہوگئے۔

یوگنڈا کے صدر یوویری موسوینی نے ٹی وی پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ایبولا سے پانچ ہلاکتیں تصدیق شدہ ہیں جبکہ اس کے علاوہ 19 اموات کے بارے میں خدشہ ہے کہ وہ بھی ایبولا کے باعث ہوئی ہیں۔

اپنے خطاب میں انہوں نے کہا کہ وہ ملک میں لاک ڈاؤن کا حکم نہیں دیں گے تاہم انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ ہ اپنے ہاتھوں کو صابن سے اچھی طرح دھوئیں، سینٹائزر کا استعمال کریں اور ایک دوسرے کے ساتھ مصافحہ نہ کریں۔

یوگنڈا کے صدر نے بتایا کہ ملک میں ایبولا کے مزید 19 کیسز کی تصدیق بھی ہوئی ہے جس میں چار ڈاکٹروں سمیت 6 ہیلتھ ورکرز شامل ہیں۔

واضح رہے کہ خطرناک ترین وائرس ایبولا کی علامات میں سر میں شدید درد، بخار کا نہ اُترنا، جسمانی اعضا کا فیل ہوجانا اور جسم کے مختلف حصوں سے خون آنا شامل ہیں۔

یہ خطرناک ترین وائرس ایک شخص سے دوسرے شخص میں با آسانی منتقل ہو جاتا ہے اور دیکھتے ہی دیکھتے موت واقع ہوجاتی ہے۔

واضح رہے کہ جان لیوا ایبولا وائرس تیزی سے دنیا کے مختلف ملکوں میں پھیلتا جارہا ہے، پاکستان میں بھی

uganda

Ebola

Tabool ads will show in this div