روڈا پروجیکٹ سے سندھ طاس معاہدہ بھی داؤ پر لگ گیا

بھارت روڈا پروجیکٹ بنانے پر سندھ طاس معاہدے کے تحت پاکستان کے خلاف سازش کر سکتا ہے، ذرائع

راوی اربن ڈیویلپمنٹ اتھارٹی پروجیکٹ (روڈا) نے سندھ طاس معاہدہ بھی داو پر لگا دیا ہے، اور ذرائع کا کہنا ہے کہ بھارت یہ پروجیکٹ بنانے پر سندھ طاس معاہدے کے تحت پاکستان کے خلاف سازش کر سکتا ہے۔

عمران خان کے روڈا پروجیکٹ کی اصلیت کھل کر سامنے آگئی ہے، اور اب منصوبے کی منظوری دینے والا محکمہ اونرشپ سے ہی مکر گیا ہے، آڈیٹر جنرل کی رپورٹ نے سارا بھانڈا پھوڑدیا ہے۔

سماء نے انکشافات سے بھرپور آڈٹ رپورٹ حاصل کر لی ہے، جس کے مطابق سابق وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدارنے کابینہ اجلاس میں بحث کے بعد رپورٹ دبا لی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ بھارت روڈا پروجیکٹ بنانے پر سندھ طاس معاہدے کے تحت پاکستان کے خلاف سازش کر سکتا ہے۔

ذرائع دفتر سندھ طاس نے بتایا کہ روڈا اتھارٹی نے اعتماد میں نہیں لیا، کرتار پور پل میں مسئلہ بھگت چکے ہیں۔

ذرائع کے مطابق روڈا اسکیم کے اصل ماسٹر مائنڈ عمران خان، فرح گوگی، اسلم اقبال اورایس ایم عمران ہیں۔

آڈیٹر جنرل پاکستان کی آڈٹ رپورٹ میں منصوبے پر اعتراض اٹھایا گیا ہے کہ سیلابی ایریا میں 5 ہزار ارب کے میگا منصوبے کی منظوری کیوں دی گئی، میگا پروجیکٹ پنجاب فلڈ پلین ایکٹ 2016ء کی کھلی خلاف ورزی ہے۔

آڈیٹر جنرل پاکستان کی رپورٹ پنجاب اسمبلی کی پبلک اکاؤنٹس کمیٹی سے بھی چھپائی گئی، اور محکمہ اریگیشن نے روڈا منصوبے کی جھیل کی کاغذی ڈرائنگ بھی مبہم قرار دے دی۔

دوسری جانب سیکرٹری ہاؤسنگ پنجاب کا کہنا ہے کہ منظوری ہم نے دی، لیکن انتظامی کنٹرول سیکرٹری عملدرآمد و کوآرڈینیشن کے پاس ہے۔

Tabool ads will show in this div