ناظم جوکھیو قتل کیس کا صلح نامہ،لواحقین نےقاتلوں کومعاف کردیا

مقتول کی والدہ اور بیوہ کی جانب سےحلف نامے جمع

ناظم جوکھیوقتل کیس میں فریقین کے درمیان صلح نامہ سامنے آگیا ہے۔ لواحقین نے ناظم جوکھیو کے قاتلوں کو اللہ کے نام پر معاف کردیا۔

ناظم جوکھیوقتل کیس میں صلح نامے کی کاپی سماء نے حاصل کرلی ہے جس کےمطابق ناظم جوکھیو کی والدہ اور بیوہ نے ملزمان کو معاف کردیاہے۔

ایڈیشنل سیشن جج ملیر کی عدالت میں جمع کروائے گئے صلح نامے میں لواحقین نے کہا ہے کہ ناظم جوکھیو کے قاتلوں کو اللہ کے نام پر معاف کر دیا ہے اورفریقین6 ملزمان کے خلاف کیس نہیں چلانا چاہتے ہیں۔

صلح نامے میں درج ہے کہ مقتول کی والدہ اور بیوہ کی جانب سےحلف نامے جمع کروائے گئےجس میں درج ہے کہ اویس جوکھیو، معراج، سلیم، دودا، سومار اور احمدکومعاف کردیا۔

یہ بھی کہا گیا کہ عدالت ملزمان کوبری کردے تو ہمیں کوئی اعتراض نہیں ہے۔ ناظم جوکھیو کی بیوہ شیریں نے بھی کہا ہے کہ اگر عدالت صلح نامہ منظور کرتے ہوئے ملزمان کو رہا کردے تو کوئی اعتراض نہیں ہوگا۔

پچھلی سماعت کا احوال

گیارہ ستمبر کو ہونے والی سماعت میں ناظم جوکھیو کی والدہ نے عدالت میں کہا تھا کہ ان بیٹے کے خون کا انصاف کیا جائے۔ مقتول کی والدہ نےعدالت کو بتايا تھا کہ مجھ سے زبردستی صلح نامہ پراورکمپرومائیز پیپر پرانگھوٹے لگوائے۔

عدالت نے ملزم جام اويس کو 24 ستمبر کو طلب کرتے ہوئے سماعت ملتوی کردی۔

عدالت نے ملزم جام اويس کو 24 ستمبر کو طلب کرتے ہوئے سماعت ملتوی کردی تھی۔

مقتول کی بیوہ کا سمجھوتہ

اس سے پہلے ناظم جوکھيو کی بيوہ نے پوليس کے تاخيری حربوں اور بااثر افراد کی دھمکيوں سے خوف زدہ ہوکر ملزمان سے سمجھوتا کرليا تھا۔

ملزمان سے صلح نامے کے بعد پولیس نے کیس سے دہشت گردی کے دفعات ختم کردی تھيں، اور جام کریم سمیت 13ملزمان کے نام خارج کرنے کی سفارش کی تھی۔

پولیس کی سفارش کے بعد انسداد دہشتگردی عدالت نے بھی ملزمان کی درخواست منظور کرتے ہوئے کیس سیشن عدالت منتقل کرديا تھا۔

ناظم جوکھیو کا قتل

مقامی صحافی ناظم جوکھيو کو گزشتہ سال نومبر ميں ملیر میں غیرملکیوں کو شکار سے روکنے کی ويڈيو وائرل ہونے کے بعد قتل کردیا گیا تھا۔

مقدمے میں نامزد پيپلزپارٹی کے رکن قومی اسمبلی عبدالکریم جوکھیو ملک سے فرار ہوگئے تھے اور اب ضمانت پر ہيں۔ جب کہ رکن سندھ اسمبلی اویس جوکھیو کیس میں گرفتار ہيں۔

NAZIM JOKHIO

Tabool ads will show in this div