معروف اسلامی اسکالر شیخ یوسف القرضاوی انتقال کرگئے

شیخ قرضاوی کو اخوان المسلمون کا روحانی قائد سمجھا جاتا تھا
<p>فائل فوٹو</p>

فائل فوٹو

معروف مصری عالم دین علامہ شیخ یوسف القرضاوی 96 سال کی عمر میں انتقال کرگئے۔

شیخ قرضاوی کافی عرصے سے علیل تھے اور قطر میں زندگی گزار رہے تھے، انکی آفیشل ویب سائٹ اور ٹوئٹر اکاؤٹ سے انکی وفات کی اطلاع دی گئی ہے۔

شیخ یوسف القرضاوی سیکڑوں کتابوں کے مصنف تھے اور اپنی وفات تک وہ انٹرنیشنل یونین آف مسلم اسکالرز کے صدر کے طور پر بھی فرائض انجام دے رہے تھے، انہیں مصر کی اسلامی تنظیم اخوان المسلمون کا روحانی قائد بھی مانا جاتا ہے۔

شیخ یوسف القرضاوی کو جماعت اسلامی کے بانی مولانا سید ابوالاعلیٰ مودودی اور امام حسن البنا سے خاص نظریاتی عقیدت تھی۔

علامہ یوسف القرضاوی کی پیدائش 9 ستمبر 1926ء کو مصر کے ایک گاؤں ”صفط تراب“ میں ہوئی اور طویل عرصہ تک وہ اخوان المسلمون میں سرگرم رہے۔

اسی دوران میں انہیں اخوانی قیادت نے مختلف عہدوں کی پیشکش کی لیکن وہ علمی اور فکری کاموں میں مصروف رہے۔

یوسف القرضاوی کو عرب دنیا میں غیر معمولی مقبولیت حاصل تھی، وہ اسلام آن لائن ڈاٹ نیٹ پر بھی لوگوں کے سوالات کے جوابات اور فتاویٰ جاری کرتے تھے۔

علامہ یوسف القرضاوی فلسطینی جہادی تحریکوں کی بھرپور حمایت کرتے تھے۔

علامہ یوسف القرضاوی کے مغرب کے خلاف دو ٹوک موقف کی بنیاد پر بعض عرب مالک نے اُن پر دہشت گرد کا لیبل لگا رکھا تھا۔

Muslim brotherhood

Yusuf Al Qaradawi

Tabool ads will show in this div