وزيرخارجہ کا عالمی برادری سے پاکستان کے قرضے ری شيڈول کرنے کا مطالبہ

خوشحال مستقبل کےلیے باہمی اتحاد اور يکجہتی کو رہنما اصول بنانا ہوگا، بلاول بھٹو
Sep 23, 2022

وزيرخارجہ بلاول بھٹو نے عالمی برداری سے پاکستان کے قرضے ری شيڈول کرنے کا مطالبہ کرديا۔

نيويارک ميں جی 77 ملکوں کے اجلاس سے خطاب ميں بلاول بھٹو نے کہا کہ ترقی يافتہ ممالک موسمياتی تبديلی سے متاثرہ ترقی پذير ملکوں کی ہنگامی بنيادوں پر مدد کريں۔

وزيرخارجہ نے پاکستان ميں حاليہ مون سون کو بھيانک قرار ديتے ہوئے کہا کہ 50 سے زيادہ ملک موسمياتی تبديلی سے متاثر ہيں۔ ايسے ميں ترقی پذيرملکوں کے نہ صرف قرضے ری شيڈول کيے جائيں بلکہ معيشت کو سہارا دينے کيلئے بھی تجارت اور ديگرشعبوں ميں مزيد اقدامات اور حمايت کی ضرورت ہے۔

بلاول بھٹو نے عالمی معيشت ميں پاک بھارت تعلقات کی اہميت کو بھی اجاگر کيا کہا ايک مرتبہ پاک بھارت تعلقات نارمل ہوجائيں تو ہم وسطی، جنوبی اور مغرب کی اُبھرتی معيشتوں ميں اپنا حصہ ڈال سکتے ہيں۔

وزيرخارجہ نے بتايا کہ پاکستان سی پيک سميت تائی پے گيس منصوبہ اور ديگر پروجيکٹس مکمل کرنا چاہتا ہے۔ اہداف کے حصول کيلئے اگلے سال دسمبر ميں چين ميں جی 77 ملکوں کا وزارتی اجلاس بلايا جائے گا۔

بلاول بھٹو نے زور ديا کہ ترقی يافتہ ممالک 2025 تک اخراج کے عمل کو صفر تک يقينی بنائيں۔ بہتر اور خوشحال مستقبل چاہيئے تو باہمی اتحاد حمايت اور يکجہتی کو رہنما اصول بنانا ہوگا۔

BILAWAL BHUTTO

climate change

G77

Tabool ads will show in this div