سندھ میں 5 سے 11 سال کی عمر کے بچوں کو کرونا ویکسین لگانے کا فیصلہ

مہم کا آغاز ستمبر میں ہوگا
<p>بشکریہ یونیسیف</p>

بشکریہ یونیسیف

محکمہ صحت سندھ ( Sindh ) کی جانب سے صوبے بھر میں پانچ سے گیارہ سال کے بچوں کو کرونا ( Covid ) سے بچاؤ کی ویکسین لگانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

صوبائی محکمہ صحت کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق وزیر صحت سندھ ڈاکٹر عذرا پیچوہو کی سربراہی میں کووڈ-19 ویکسین سے متعلق اسٹیئرنگ کمیٹی کا اجلاس 29 اگست کو ہوا۔

اجلاس میں سیکریٹری صحت ذوالفقار شاہ، پارلیمانی سیکریٹری صحت قاسم سراج سومرو، عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کی نمائندہ ڈاکٹر سارہ سلمان، سندھ کے توسیعی پروگرام برائے امیونائزیشن کے سربراہ ڈاکٹر ارشاد میمن سمیت دیگر حکام نے شرکت کی۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ صوبے بھر میں 5 سے 11 سال کی عمر کے بچوں کو کرونا وائرس سے بچاؤ کے ٹیکے 19 سے 24 ستمبر کے درمیان لگائے جائیں گے، جب کہ پہلی 10 لاکھ خوراکیں کراچی میں دی جائیں گی۔ اجلاس میں صوبائی محکمہ صحت کی جانب سے بچوں میں کووڈ ویکسین لگانے کی حکمت عملی کے بارے میں تفصیلی بریفنگ بھی دی گئی۔

صوبائی محکمہ صحت کے مطابق 5 سے 11 سال کی عمر والے بچوں میں کووڈ کی بیماری اور اموات کی نشاندہی آٹھ سے زیادہ پھیلنے والے اضلاع میں کی گئی تھی جن کی مارچ 2020 سے اگست 2022 تک نگرانی کی گئی تھی۔ یہ اضلاع کراچی سینٹرل، ایسٹ، کورنگی، ملیر، کراچی ساؤتھ، ویسٹ، کیماڑی اور حیدر آباد ہیں۔

اجلاس میں اس بات کی بھی نشاندہی کی گئی کہ زیادہ پھیلاؤ والے اضلاع میں 70 فیصد بچوں کو کور کرنے کے لیے، 34 لاکھ مرحلہ وار کووِڈ ویکسین لگائی جائیں گی جب کہ پہلی 10 لاکھ خوراکیں کراچی میں دی جائیں گی۔

اس موقع پر تکنیکی معاون ٹیکہ لگائے گئے بچے کا نام، عمر، جنس کے ساتھ ساتھ بچے کے ساتھ آنے والے والدین یا سرپرست کا قومی شناختی کارڈ اور رابطہ نمبر ریکارڈ میں رکھا جائے گا۔

اجلاس میں گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر عذرا پیچوہو کا کہنا تھا کہ اسکولوں کے علاوہ بازاروں اور پارکوں میں بھی بچوں کو شاٹس لگائے جائیں گے۔ صوبائی مانیٹر 3 ستمبر تک ویکسینز اور رپورٹنگ ٹولز کی تصدیق کے لیے سائٹس کا دورہ بھی کریں گی۔

سندھ

Children

schools

HEALTH

COVID VACCINE

Tabool ads will show in this div