مقبوضہ کشمیر میں پری پول رگنگ کا بھارتی منصوبہ مسترد کرتے ہیں، دفتر خارجہ

خطے میں ہتھیاروں کی دوڑ پر شدید تحفظات ہیں، عاصم افتخار

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیرمیں پری پول رگنگ کی بھارتی کوششیں مسترد کرتے ہیں، یہ مقبوضہ کشمیر میں مسلم اکثریت کو اقلیت میں تبدیل کرنے کی کوشش ہے۔

ترجمان دفترخارجہ عاصم افتخار احمد نے ہفتہ وار بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ بھارت نے 2.5 ملین ووٹرز کو ووٹ کے حق کے لیے جعلی طور پر رجسٹر کیا ہے، اس کا مقصد ان انتخابات پر اثرا انداز ہونا اور مسلم ووٹ کو متاثر کرنا ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا بھارتی پولیس نے مقبوضہ کشمیرمیں زیرحراست محمد علی حسین نامی کشمیری کو قتل کیا، یہ راولا کوٹ کے ضیا مصطفیٰ کے بعد دوسرا ماورائے عدالت جعلی قتل ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا 5 اگست 2019 سےاب تک 666 کشمیری شہید ہوچکے ہیں، بھارتی جارحانہ اقدامات کے باعث سرحدپار سے کوئی مثبت آثار دکھائی نہیں دے رہے، اس ہفتے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی پرچم کی زبردستی تنصیب کا عملی مظاہرہ دیکھا گیا۔

ترجمان نے کہا خطے میں ہتھیاروں کی دوڑ، اسلحے کے عدم توازن پر پاکستان کو شدید تحفظات ہیں، ہم اقوام متحدہ کو اپنے تحفظات سے آگاہ کر چکے ہیں، بھارت کی 70 فیصد تعیناتی و ہتھیاروں کی تنصیب پاکستان کیخلاف ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا وزیر اعظم آئندہ ہفتے قطر کا دورہ کریں گے، وزیر اعظم کے دورہ کے حولے سے جلد مزہد معلومات جاری کریں گے، دورہ قطر میں اقتصادی تعاون ایجنڈے پر سر فہرست ہے۔

ترجمان نے کہا افغان اثاثہ جات کو غیر مشروط غیر منجمد کیا جانا چا ہیے، ہم افغان اثاثہ جات کو غیر منجمد کرنے کے حوالے سے کسی بھی اقدام کا خیر مقدم کرتے ہیں، پاکستان افغانستان کے اثاثہ جات کو غیر منجمد کرنے کے حوالے سے مرکزی کردار ادا کر رہا تھا۔

ترجمان نے کہا سمر قند میں شنگھائی تعاون تنظیم کے اجلاس میں رکن ممالک کی قیادت موجود ہوگی، وہاں موجود اراکین کی سیاسی قیادت کے درمیاں ملاقاتیں بھی ہوں گی، ان ملاقاتوں کے حوالے سے جلد آگاہ کریں گے۔

ترجمان نے کہا بھارتی طیارے سے آنے والے 12 افراد کے بارے میں سول ایوی ایشن بتاسکتی ہے۔

Indian occupied kashmir

MOFA

Foreign Office Spokesperson

Tabool ads will show in this div