کھلےتیل پر پابندی کا کیس،ڈی جی سندھ فوڈ اتھارٹی عدالت طلب

فوڈ اتھارٹی کے وکیل گودام سیل کرنے کا طریقہ کار بتانے میں ناکام رہے

سندھ ہائیکورٹ نے کھلے تیل پر پابندی اور گودام سیل کھولنےسے متعلق کیس میں آئندہ سماعت پرڈی جی سندھ فوڈ اتھارٹی کو طلب کرلیا۔

سندھ ہائیکورٹ میں کھلے تیل پر پابندی اور گودام سیل کھولنے سےمتعلق درخواستوں کی سماعت ہوئی۔

چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ یہ بتادیں کہ ہول سیلرز تیل اور گھی کہاں سے خریدتے ہیں؟۔

ہول سیلرزکے وکیل نے بتایا ک شجاع آباد انڈسٹری اور دیگرجگہوں سے تیل اور گھی خریدتے ہیں۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ جب انسانی زندگی کا مسئلہ ہو تو باریک بینی سے جائزہ لیناہوگا۔

ہول سیلرزکے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ ہمارے خلاف کسی نوٹس کے بغیر کارروائی کی گئی۔

فوڈ اتھارٹی کے وکیل نے جواب دیا کہ جن کے خلاف کارروائی ہوئی ہے ان میں سے کسی کے پاس لائسنس نہیں تھا۔

فوڈ اتھارٹی کے وکیل گودام سیل کرنے کا طریقہ کار بتانے میں ناکام رہے۔

عدالت نے آئندہ سماعت پر ڈی جی سندھ فوڈ اتھارٹی کو طلب کرلیا۔ سندھ ہائیکورٹ میں کیس کی سماعت 31 اگست تک ملتوی کردی گئی۔

واضح رہے کہ پچھلی سماعت میں عدالت نے ہول سیلرز سے ٹیکس، بجلی کے بل اور کھلا تیل فروخت کرنے کی دستاویزات طلب کی تھیں۔

SINDH HIGH COURT

Tabool ads will show in this div