شہباز گل پر مبینہ تشدد کیخلاف تحریک انصاف کی درخواست دائر

شہباز گل کی جسمانی اور دماغی حالت بہتر نہیں، زندگی کیلئے خطرہ ہے، درخواست

تحریک انصاف کی جانب سے شہباز گل پر مبینہ تشدد کیخلاف اسلام آباد ہائیکورٹ میں درخواست دائر کردی۔

بغاوت کے مقدمے میں گرفتار پاکستان تحریک انصاف ( پی ٹی آئی ) کے رہنما شہباز گل ( Muhammad Shahbaz Shab Gill ) پر مبینہ تشدد کیخلاف تحریک انصاف نے اسلام آباد ہائی کورٹ سے رجوع کرلیا ہے۔

تحریک انصاف نے اسلام آباد ہائی کورٹ میں درخواست دائر کی ہے، جس میں استدعا کی ہے کہ شہبازگل کا طبی معائنہ کرنے کے لیے غیر جانبدار ڈاکٹروں پر مشتمل میڈیکل بورڈ بنایا جائے۔

درخواست میں مؤقف اختیار کرتے ہوئے استدعا کی ہے کہ شہباز گل پر جسمانی تشدد کی خبریں میڈیا پر بھی آ چکی ہیں، شہباز گل کو حراست میں رکھنے کا مقصد صرف تشدد کرنا ہے، عدالت شہباز گل کے جسمانی تشدد سے روکنے کا حکم جاری کرے۔

درخواست میں یہ بھی استدعا کی گئی ہے کہ پولیس کو شہباز گل پر دباؤ ڈال کراعترافی بیان لینے سے روکا جائے، شہباز گل کی جسمانی اور دماغی حالت بہتر نہیں،زندگی کیلئے خطرہ ہے۔

شہبازگل کو سانس کا مسئلہ ہے

سلام آباد کی جوڈیشل عدالت میں پولیس نے پاکستان تحریک انصاف ( پی ٹی آئی ) کے رہنما شہباز گل کی میڈیکل رپورٹ جمع کرا دی ہے۔ رپورٹ کے مطابق چار سینیر ڈاکٹروں پر مشتمل ٹیم نے شہباز گل کا طبی معائنہ کیا۔ پولیس کی جمع کرائی گئی رپورٹ کے مطابق شہباز گل کو بچپن سے سانس کا مسئلہ ہے۔

18 اگست بروز جمعرات کو جوڈیشل مجسٹریٹ کی عدالت میں ڈیوٹی جج راجہ فرخ علی کی عدالت میں پولیس کی جانب سے جمع کرائی گئی میڈیکل رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ شہباز گل سانس کی تکلیف کیلئے ضرورت پڑنے پر ایک مخصوص دوا استعمال کرتے ہیں۔

ڈیوٹی جج راجہ فرخ علی کی عدالت میں جمع کرائی گئی میڈیکل رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ شہباز گل کو سانس لینے میں مسئلہ ہے، جب کہ کندھے ، گردن اور چھاتی کے بائیں جانب درد محسوس کر رہے ہیں۔ ان کی ای سی جی کرائی گئی ہے۔

میڈیکل بورڈ نے ایکسرے اور کچھ مزيد ٹیسٹ کرانے کا مشورہ دیا ہے، کارڈیالوجسٹ اور پلمانولوجسٹ سے طبی معائنہ بھی درکار ہے۔ رپورٹ کے مطابق شہباز گل کے مزید طبی معائنے کی ضرورت بھی پڑ سکتی ہے۔

PTI

Islamabad High Court (IHC)

Shehbaz Gill

Tabool ads will show in this div