کراچی میں پلاٹوں پر قبضے سے متعلق ڈپٹی کمشنر کو رپورٹ پیش کرنے کا حکم

کےڈی اے اور ڈپٹی کمشنر پر برہمی کا اظہار

کراچی میں پلاٹوں پرقبضے کے کیس میں سندھ ہائی کورٹ نےکے ڈی اے اور ڈپٹی کمشنر پر برہمی کا اظہار کیا ہے۔ عدالت نےڈپٹی کمشنرکو ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل سے مشاورت کرکے رپورٹ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔

کراچی کے علاقے گلستان جوہر میں پلاٹوں پر قبضے کے کیس میں سندھ ہائی کورٹ نے کےڈی اے اور ڈپٹی کمشنر پر برہمی کا اظہار کیا ہے۔

عدالت کی جانب سے کہا گیا کہ 40 سال پہلے کی اسکیموں کے پلاٹس مالکان کو نہیں دیے جاسکے۔

سندھ ہائی کورٹ کے جسٹس حسن اظہر رضوی نےریمارکس دئیے کہ منٹس تو دے دیں گے،اس معاملے پرایکشن کیا ہوا ہے یہ تو بتائیں؟۔

عدالت کی جانب سے کہا گیا کہ کےڈی اے نے پلاٹ الاٹ کردیئے تو ڈیمارکیشن کس بات کی؟ ڈپٹی کمشنر توڈس انفارمیشن پھیلارہا ہےاور جان چھڑانے والی باتیں کررہا ہے۔

جسٹس حسن اظہررضوی نے ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل سے مکالمہ کیا کہ ڈپٹی کمشنر کو بلائیں،ورنہ ہم عدالت میں بلا کر وہ حشرکریں گے جس کا وہ مستحق ہے۔

عدالت نے ڈپٹی کمشنر کو ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل سے مشاورت کرکے رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیا۔

کراچی

SINDH HIGH COURT

Tabool ads will show in this div