موسمیاتی تبدیلی کا خوراک اور پانی کی حفاظت سے براہ راست تعلق ہے، وزیراعظم

چیلنجز بہت بڑے ہیں اور فوری توجہ کی ضرورت ہے، شہباز شریف

وزیراعظم شہباز شریف کا کہنا ہے کہ موسمیاتی تبدیلی کے چیلنجز بہت بڑے اور اس پر فوری توجہ کی ضرورت ہے، خوراک اور پانی کی حفاظت کا براہ راست تعلق موسمیاتی خطرات سے ہے۔

اپنی ٹوئٹ میں وزیر اعظم نے کہا کہ وفاقی کابینہ نے آج موسمیاتی تبدیلی سے درپیش کثیر جہتی چیلنجز پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا۔ پاکستان موسمیاتی تبدیلیوں کا سامنا کرنے والے سرفہرست 10 ممالک میں شامل ہے۔ چیلنجز بہت بڑے ہیں اور فوری توجہ کی ضرورت ہے۔

وزیر اعظم نے مزید کہا کہ وہ دن گئے جب موسمیاتی تبدیلی ڈرائنگ روم میں بحث کا موضوع تھی، یہ ہماری روزمرہ کی زندگی کو متاثر کر رہی ہے۔

وزیراعظم نے مزید کہا کہ خوراک اور پانی کی حفاظت کا براہ راست تعلق موسمیاتی خطرات سے ہے۔ ہم اپنے بچوں کے لیے ایک صحت مند اور بامعنی مستقبل کی تشکیل کے لیے اس چیلنج کا مقابلہ کرنے کے لیے پرعزم ہیں۔

پاکستان میں رواں برس غیر متوقع موسم دیکھا گیا ہے، اپریل تک شدید خشک سالی کے بعد جون میں شدید بارش اور برفباری کے بعد ملک میں ریکارڈ مون سون بارشیں ہوئی ہیں۔

وزارت موسمیاتی تبدیلی نے خبردار کیا ہے کہ اگر حالات یہی رہے تو 2025 سے پاکستان کو پانی کی کمی کا سامنا ہوگا۔

پاکستان

climate change

pm shehbaz sharif

Tabool ads will show in this div