کراچی: ڈکیتوں نے بیٹے کے سامنے فائرنگ کرکے باپ کو قتل کردیا

کراچی میں رواں سال ڈکیتی مزاحمت پر 56 افراد قتل ہوچکے ہیں،حکام

کراچی کے علاقے تین تلوار پر ڈکیتی مزاحمت پر ڈاکووں نے فائرنگ کرکے بیٹے کے سامنے باپ کو قتل کردیا۔

حکام کے مطابق کوئٹہ کے 55سالہ تاجر نيک محمد 11اگست کو کراچی آئے تھے اور 14 اگست کی رات کو آزادی کا جشن منانے کيلئے بیٹے کے ساتھ سی ویو جارہے تھے کہ تین تلوار کے قریب گاڑی کا پيٹرول ختم ہوا ، اس دوران دو ڈکیت موقع پر پہنچ گئے اور مزاحمت پر نيک محمد پر گولی چلا دی۔

کوئٹہ کے کپڑے کے مقتول تاجر نیک محمد کا ایک گھر گلشن جمال میں بھی تھا جہاں وہ اکثر اہلخانہ کے ہمراہ رہنے آتے تھے۔

واضح رہے کہ کراچی میں رواں سال سب سے زیادہ اسٹریٹ کرائمز کی وارداتیں کورنگی جبکہ دوسرے نمبر پر گلشن اقبال اور تیسرے نمبر پر جمشید روڈ کے علاقوں میں ہوئیں ہیں۔ ڈکیتی کے واقعات میں اس سال 56 افراد قتل جبکہ 280 سے زائد زخمی ہوچکے ہیں۔

پولیس افسران کا کہنا ہے کہ ڈکیتی کی وارداتوں میں کمی لانا ہے تو سیف سٹی پروجیکٹ کو جلد مکمل کرنا ہوگا تاکہ شہر کی مارنیٹرنگ کی جاسکے۔

street crime

Karachi Police

Tabool ads will show in this div