25 سال بعد بھارت کیسا ہوگا؟ مودی نے بتادیا

کرپشن اور خاندانی سیاست بھارت کیلئے بڑے چیلنجز ہیں، یوم آزادی پر خطاب

بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نے بھارت کے 76 ویں یوم آزادی پر کہا ہے کہ 25 سال بعد بھارت دنیا کے ترقی یافتہ ملکوں میں شامل ہوگا۔

یوم آزادی کے موقع پر حسب روایت لال قلعے کی فصیل سے خطاب کرتے ہوئے بھارتی وزیراعظم نے کہا بھارت جمہوریت کی ماں ہے اور اس کے لیے ہمیں دوسروں کے سرٹیفکیٹ کی ضرورت نہیں۔

واضح رہے کہ بعض عالمی ادارے مودی حکومت پر مسلسل یہ الزام عائد کرتے رہے ہیں کہ اس نے ملک میں جمہوریت کے بجائے آمریت کو فروغ دیا ہے۔

وزیر اعظم مودی نے اپنے طویل خطاب میں کہا کہ آئندہ 25 برسوں میں بھارت ایک ترقی یافتہ ملک بن جائے گا، ان کا کہنا تھا کہ جب آزادی کے 100 برس مکمل ہوں تو بھارت کو ایک ترقی یافتہ ملک ہونا چاہئے۔

اس بار مودی نے اپنے خطاب میں پاکستان یا کشمیر کا ذکر نہیں کیا حالانکہ عام طور پر وہ اپنے خطاب میں پاکستان پر نکتہ چینی لازمی کرتے ہیں۔

بھارتی وزیراعظم نے کہا کہ کرپشن اور خاندانی سیاست بھارت کے دو سب سے بڑے چیلنج ہیں اور عوام کو چاہیے کہ وہ بھی اس چیلنج کا مقابلہ کرنے کے لیے کام کریں۔ جب تک ہم کرپٹ لوگوں کو سزائیں نہیں دینگے اس وقت تک قوم ترقی نہیں کر سکتی۔

مودی نے کہا کرپشن بھارت کی بنیاد کو کھائے جا رہی ہے، میں اس کے خلاف لڑنا چاہتا ہوں، میں 130 کروڑ بھارتیوں سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ بدعنوانی کے خلاف لڑنے میں میری مدد کریں، ہمیں بدعنوانی اور بدعنوانوں کے خلاف نفرت کا رویہ اپنانا ہو گا۔

ان کا کہنا تھا کہ خواتین بھارتی ترقی کا ایک اہم ستون ثابت ہو سکتی ہیں، ہم اپنی ’’ناری شکتی“ کو استعمال کرینگے، ہم اپنی بیٹیوں کو جتنے زیادہ مواقع دیں گے وہ ہمیں اتنا ہی آگے لے جائیں گی۔

بھارتی وزیراعظم نے کہا بھارت کو دوسروں پر منحصر ہونے کے بجائے خود کفیل ہونا ہوگا تاکہ دفاع سمیت تمام چیزوں میں بھارت دوسروں کا محتاج نہ رہے۔

انہوں نے اپنی حکومت کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ 75 برسوں میں پہلی بار لال قلعے میں یوم آزادی پر جس توپ سے آج سلامی پیش کی گئی وہ خود بھارت نے تیار کی ہے۔

انڈیا

Narendra Modi

indian prime minister

India independence day

Tabool ads will show in this div