شمالی وزیرستان میں سیکیورٹی فورسز کا آپریشن، ایک دہشت گرد ہلاک

ہلاک دہشت گرد سے اسلحہ اور گولہ بارود برآمد ہوا، آئی ایس پی آر

میرعلی میں سیکیورٹی فورسز کے آپریشن کے دوران ایک دہشت گرد ہلاک ہوگیا۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق شمالی وزیرستان کے علاقے میرعلی میں مصدقہ اطلاعات پر سیکیورٹی فورسز کا آپریشن جاری تھا کہ دہشت گردوں کی جانب سے فائرنگ کردی گئی۔

آئی ایس پی آر کے مطابق آپریشن کے دوران شدید فائرنگ کے تبادلے میں ایک دہشت گرد ہلاک ہوگیا، جب کہ ہلاک دہشت گرد کے قبضے سے اسلحہ اور گولہ بارود برآمد ہوا ہے۔ مقامی افراد نے آپریشن کو سراہا اور دہشت گردی کیخلاف بھرپور تعاون کا اظہار کیا۔

آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ ہلاک دہشت گرد سیکورٹی فورسز پر حملوں میں ملوث تھا، اور شہریوں کے قتل کی واردتوں میں بھی سرگرم رہا۔ جب کہ ہلاک دہشت گرد شمالی وزیرستان میں قاری سمیع کی ٹارگٹ کلنگ میں بھی ملوث تھا۔

ہرنائی بلوچستان میں دو جوان شہید

واضح رہے کہ گزشتہ روز بلوچستان کے علاقے ہرنائی میں دہشت گردوں کے حملے میں دوجوان شہید اور ایک میجر شدید زخمی ہوگئے تھے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق 13 اور 14 اگست کی درمیانی شب دہشت گردوں کی جانب سے ہرنائی میں قائم سیکیورٹی فورسز کی چوکی پر حملہ کیا گیا۔

آئی ایس پی آر کے مطابق دہشت گردوں کے حملے کو کامیابی سے پسپا کردیا گیا، تاہم دہشت گردوں اور سیکیورٹی فورسز کے مابین ہونے والی فائرنگ کے تبادلے میں دو جوان شہید ہوگئے۔

آئی ایس پی آر نے بتایا کہ شہید ہونے والوں میں نائیک عاطف اور سپاہی قیوم شامل ہیں، جب کہ میجر عمر اس فائرنگ میں زخمی ہوگئے ہیں۔

آئی ایس پی آر نے بتایا کہ فرار ہونے والے دہشت گردوں کا تعاقب قریبی پہاڑوں میں کیا گیا ہے۔

Tabool ads will show in this div