برطانوی کرکٹر مونٹی پنیسر بھی ’لال سنگھ چڈھا ’کے خلاف میدان میں آگئے

فلم میں بھارتی فوج اور سکھوں کی توہین کی گئی ہے، مونٹی پنیسر

سابق برطانوی کرکٹر مونٹی پنیسر بھی عامر خان کی فلم ’لال سنگھ چڈھا ’ کے خلاف میدان میں آگئے ہیں۔

بالی ووڈ کے مسٹر پرفیکشنسٹ عامر خان کی نئی فلم ’ لال سنگھ چڈھا ’ بھارت بھر کے سینما گھروں میں ریلیز ہوگئی ہے۔

’لال سنگھ چڈھا ’ 1994 میں ریلیز ہونے والی ہالی ووڈ فلم فاریسٹ گمپ کا ہندی ری میک ہے۔ اس فلم نے اس وقت 6 آسکر ایوارڈ جیتے تھے۔

دوسری جانب بھارت میں فلم کے بائیکاٹ کی مہم اب بھی جاری ہے، فلم کے خلاف اب سابق برطانوی کرکٹر مونٹی پنیسر بھی میدان میں آگئے ہیں۔

مونٹی پنیسر نے اپنی ٹوئٹ میں کہا ہے کہ فاریسٹ گمپ (Forrest Gump) کی کہانی امریکی فوج کے لحاظ سے بالکل ٹھیک ہے کیونکہ امریکا نے کم ذہنی استعداد (IQ) والے افراد کو ویتنام جنگ کے لئے بھرتی کیا۔ لال سنگھ چڈھا میں دکھایا گیا ہے کہ کم آئی کیو والے آدمی کو بھارتی فوج میں بھرتی کیا گیا ہے۔ یہ بھارت کی مسلح افواج اور سکھوں کی توہین ہے۔

بھارتی نژاد برطانوی کرکٹر نے کہا کہ لال سنگھ چڈھا میں عامر خان نے ذہنی پسماندہ (کم آئی کیو) والے کا کردار ادا کیا ہے۔ اس نے سب کی توہین کی ہے۔ اس لئے فلم کا بائیکاٹ کریں۔

فلم کے بارے میں ناقدین کی رائے

عامر خان 2018 میں ریلیز ہونے والی فلم ٹھگز آف ہندوستان کے بعد لال سنگھ چڈھا کے ساتھ بڑے پردے پر جلوہ گر ہوئے ہیں۔ فلم 167 کروڑ روپے سے زائد سرمائے سے بنی ہے۔

’لال سنگھ چڈھا ’ کا مقابلہ اکشے کمار کی فلم ‘رکشا بندھن’ سے ہے۔

’لال سنگھ چڈھا ’ سے متعلق ناقدین کا کہنا ہے کہ اگرچہ فلم کی کہانی اصل فلم (فاریسٹ گمپ) سے مماثلت رکھتی ہے لیکن فلم کے ہدایت کار نے اسے ایک نئے انداز سے بنانے کی کوشش کی ہے۔

ناقدین کا مزید کہنا ہے کہ فلم عام فلموں کے مقابلے میں زیادہ طویل ہے اس لئے اسے دیکھنے والے بعض مقمات پر بور ہوجاتے ہیں۔

Tabool ads will show in this div