پی ٹی آئی کارکنان پر نجی ٹی وی کے کیمرہ مین پر تشدد کا مقدمہ درج

کوريج ميں خلل ڈالنے سے منع کرنے پر ملزمان نے حملہ کر ديا، ايف آئی آر

نجی ٹی وی کے کیمرہ مین پر تشدد کرنے اور کیمرہ توڑنے والے پی ٹی آئی کے کارکنان کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا۔

گزشتہ روز چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کی رہائش گاہ بنی گالہ میں پی ٹی آئی رہنماؤں کی پریس کانفرنس تھی، اور اس کی کوریج کے لئے مختلف میڈیا چینلز کے نمائندے بھی شریک ہوئے۔

ایک طرف میڈیا کے نمائندوں کو مدعو کیا گیا اور دوسری جانب تحریک انصاف کے کارکنان نے نجی وی چینل کے کیمرہ مین کو تشدد کا نشانہ بناڈالا۔

نجی وی ڈی کے کیمرہ مین واجد مغل نے تھانہ بنی گالا ميں تحریک انصاف کے کارکنوں کے خلاف ایف آئی آر درج کرادی ہے۔

ایف آئی آر کے متن کے مطابق واجد مغل نے اپنے بیان میں کہا کہ گزشتہ روز بنی گالہ میں تحریک انصاف کے رہنماؤں کی پریس کانفرنس کی کوریج کے لئے موجود تھا، تو اسی دوران سینیٹر فیصل چوہدری اور ان کے ساتھ موجود جتھے نے کوریج میں خلل ڈالنے کی کوشش کی۔

بیان کے مطابق جب انہیں ایسا کرنے سے منع کیا تو سوچے سمجھے منصوبے کے تحت انہوں نے مجھ پر تھپڑوں کی بارش کردی اور مجھے نیچے گرا دیا، ساتھی رپورٹرز اور دیگر نمائندوں نے روکنے کی کوشش کی تو انہیں بھی مغلظات بکی گئیں، اور ہمارے پیشے کو بھی گالیاں دی گئیں۔

کیمرہ مین کے بیان کے مطابق پی ٹی آئی کے کارکنان نے فیصل چوہدری کے زیرنگرانی مجھے نیچے گرایا جس کے باعث میرا کیمرہ بھی ٹوٹ گیا، لیکن سینیٹر فیصل چوہدری چپ چاپ کھڑے تماشہ دیکھتے رہے، واقعے کی تمام ویڈیو موجود ہے۔

ایف آئی آر میں درخواست کی گئی ہے کہ مجھے اپنی صحافتی ذمہ داریوں سے روکنے، تشدد کرنے اور سنگین نتائج کی دھمکیاں دینے پر مقدمہ درج کیا جائے اور میری درخواست پر قانون کے مطابق کارروائی عمل میں لائی جائے۔

Tabool ads will show in this div