قومی اسمبلی کے ملازمین کو 5 اضافی اعزازیئے دے دیئے گئے

قومی خزانے پر 27 کروڑ کا اضافی بوجھ پڑ گيا

قومی اسمبلی کے ملازمین کو 5 اضافی اعزازیئے دے دیئے گئے ہیں جس سے قومی خزانے پر 27 کروڑ ورپے کا اضافی بوجھ پڑا ہے۔

حکومت کی جانب سے قومی اسمبلی اور سینیٹ سیکرٹریٹ کے افسران اور ملازمين پر نوازشات کی بارش شروع کردی گئی ہے، جس کے بعد قومی اسمبلی ملازمين کی پانچوں انگلياں گھی ميں ہیں۔

پہلے مرحلے میں قومی اسمبلی کے گریڈ 1 سے 22 تک کے ملازمین کو 5 اضافی اعزازیئے دے دیئے گئے ہیں، اور اس کرم نوازی سے قومی خزانے پر 27 کروڑ کا اضافی بوجھ پڑ گيا ہے۔

دوسری جانب سینیٹ سیکرٹریٹ بھی بیوروکریسی کو نوازنے کیلئے کوشاں ہے، اور چیئرمین سینیٹ نے بھی ملازمین کو اعزازیہ دینے کی تیاری کر لی ہے۔ اور سینیٹ سیکرٹریٹ 23 کروڑ روپے اضافی بونس کی مد میں خرچ کرے گا۔

اضافی الاؤنس کیلئے تجاویز بیورو کریسی نے مرتب کیں، جب کہ پارليمنٹ ملازمين کی تنخواہيں پہلے ہي باقی محکموں سے ڈبل ہيں۔

Tabool ads will show in this div