اداروں کیخلاف سوشل میڈیا پر مہم، ایک اور گواہ سامنے آگیا

پی ٹی آئی کارکن پرویز غلام رسول کو غلطی کا احساس ہوگیا

فوج مخالف ٹویٹ کرنے والے پی ٹی آئی کارکن پرویز غلام رسول کو غلطی کا احساس ہوگیا۔

ویڈیو پیغام میں میں کہا کہ عمران خان کی تقریروں اور پی ٹی آئی میڈیا سیل کے ٹرینڈز دیکھ کر فوج اور آرمی چیف کے خلاف پوسٹ کر دی۔

غلام رسول کا کہنا تھا کہ مجھے سنگین غلطی کا احساس ہو گیا، نہایت معذرت خواہ ہوں، مجھے اپنی قربانیاں دینے والی فوج اور آرمی چیف بے حد عزیز ہیں۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز ہیلی کاپٹرحادثے کے بعد نفرت انگیز مذموم مہم کی تحقیقات کیلیے مشترکہ ٹیم تشکیل دیدی گئی۔

وزارت داخلہ نے سوشل میڈیا پر توہین آمیزٹرولنگ کرنے والوں کے خلاف کارروائی کیلئے 6 رکنی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کی تشکیل کا نوٹیفکیشن جاری کردیا۔ ئی ایس آئی، آئی بی اور ایف آئی اے کے نمائندے جے آئی ٹی میں شامل ہوں گے۔

تحقیقاتی ٹیم میں ایف آئی اے کے محمد جعفر، ڈاکٹروقار، ایازخان اور عمران حیدر شامل ہوں گے۔ آئی ایس آئی سے لیفٹیننٹ کرنل سعد اور آئی بی کے وقارنثار بھی ٹیم کا حصہ ہوں گے۔

معاملے پرایف ائی اے سائبر ونگ پہلے ہی 2 درجن افراد کو طلب کرچکا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ 7 ٹرولرز کا تعلق مخصوص سیاسی جماعت سے ہے۔

آرمی کے سائبر ونگ نے بھی 10 ٹرولرز کی نشاندہی کرکے ان کی تفصیلات ایف ائی اے کودے دی ہیں، تحقیقات کے بعد ملزمان کیخلاف پیکا قانون کے تحت کارروائی ہوگی۔

helicopter crash

social media campaign

Tabool ads will show in this div