روہڑی میں ماتمی جلوس کے دوران دھکم پیل، دم گھٹنے سے 6 افراد جاں بحق

واقعے میں 100 سے زائد افراد بے ہوش، اسپتال منتقل

روہڑی میں ماتمی جلوس کے دوران گرمی اور حبس کی وجہ سے دم گھٹنے کے باعث 6 افراد جاں بحق اور 100 سے زائد بے ہوش ہوگئے۔

ڈی آئی جی سکھر جاوید جسکانی نے واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے سماء ڈیجیٹل کو بتایا کہ واقعہ 8 اور 9 محرم کی رات پیش آیا، جلوس میں گنجائش سے زیادہ لوگ موجود تھے، دم گھٹنے کی وجہ سے 6 افراد جاں بحق اور 100 سے زائد بے ہوش ہوگئے۔

انہوں نے مزید کہا کہ گزشتہ شب محرم الحرام کے سلسلے میں مرکزی جلوس کربلا کے مقام پر شمع گل کی رسم کیلئے جمع ہوا تھا، جگہ کم اور شرکاء کی تعداد بہت زیادہ تھی۔

ڈی آئی جی کے مطابق تقریباً 2 لاکھ افراد کا مجمع کربلا میں جمع تھا، اس دوران شدید گرمی اور حبس کی وجہ سے کئی افراد کی حالت خراب ہوگئی، متاثرین کو ڈی ایچ کیو سکھر منتقل کیا گیا، جہاں بے ہوش ہونیوالے 6 عزادار زندگی کی بازی ہار گئے۔

روہڑی پریس کلب کے صدر مجاہد بزدار نے انڈیپنڈنٹ اردو سے گفتگو میں بتایا کہ جلوس میں ہزاروں کی تعداد میں مرد و خواتین شریک ہوتے ہیں، اس کے راستوں پر سیکیورٹی کے غیرمعمولی انتظامات کئے جاتے ہیں، تاہم جلوس کے اندر انتظامات ماتمی پرمٹ ہولڈرز اور اسکاؤٹس کرتے ہیں۔

ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ ماتمی جلوس میں بعض اوقات دھکم پیل کی وجہ سے بیشتر شرکاء زخمی ہوجاتے ہیں۔ ڈپٹی کمشنر سکھر ڈاکٹر جاوید احمد نے انڈیپنڈنٹ اردو کو بتایا کہ محرم کے جلوسوں کے حوالے سے تمام ادارے الرٹ ہیں، ماتمی جلوس کی گزر گاہوں پر 50 بڑے پنکھے لگائے گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ صبح کا افسوسناک واقعہ موسمی اثرات اور زائرین کی دھکم پیل کے باعث پیش آیا، اس واقعے کے بعد شہری دفاع اور دیگر رضاکاروں کو مزید بہتر انداز میں کام کا کہا گیا ہے۔

stampede

SUKKUR

rohri

MOHARRAM UL HARAM

Tabool ads will show in this div