کوئٹہ:یوم عاشور کے حوالے سے سیکورٹی پلان اور جلوس کا روٹ طے

جلوس منگل کی صبح 8 بج کر 45 منٹ پر برآمد ہو گا

کوئٹہ میں یوم عاشور کے حوالے سے سیکورٹی پلان اور جلوس کا روٹ طے کرلیا گیا ہے۔

کوئٹہ میں پیر کو پریس کانفرنس کرتے ہوئے ڈی آئی جی سید فدا حسین شاہ نے بتایا کہ یوم عاشورہ کا جلوس منگل کی صبح 8 بج کر 45 منٹ پر برآمد ہو گا۔

سیکورٹی کے لئے روٹ مکمل طور پر سیل کرکے پولیس اور ایف سی کے5 ہزار سے زائد اہلکار تعینات کردئیے گئے ہیں۔

یوم عاشور کے جلوس کے دوران شہر میں موبائل فون سروس بھی بند رہے گی۔

جلوس کا روٹ 3 کلومیٹر ہوگا اور ہیلی کاپٹر سمیت سی سی ٹی وی کیمروں سے بھی جلوس کی نگرانی کی جائےگی۔ فدا حسین نے بتایا کہ کوئٹہ میں موبائل فون سروس بند کرنا مجبوری ہے اورعوام کی پریشانی کا احساس ہے۔

ڈی آئی جی کوئٹہ نے بتایا کہ کسی ناخوشگوار واقعے سے نبٹنے کے لیے فوج کو اسٹینڈ بائی رکھا گیا ہے۔

کوئٹہ میں عاشور کےماتمی جلوس میں شرکت کے لیے ہزارہ ٹاؤن، مچھ اور دیگر علاقوں سے آنے والے چھوٹے بڑے جلوس، اسپنی روڈ جی پی او چوک، زرغون روڈ ،حالی روڈ سے ہوتے ہوئےعلمدارروڈ پر مرکزی جلوس میں شرکت کے لئے پہنچیں گے۔

جلوس کے گزرنے کے دوران ان شاہراوں پر کسی قسم کی ٹریفک کو آنے کی اجازت نہیں ہوگی۔مذکورہ جلوس علمدارروڈ امام بارگاہ پہنچ کر مرکزی جلوس کے ہمراہ علمدار روڈ سے برآمد ہو کر اپنے مقررہ راستوں طوغی روڈ، مشن چوک سے ہوتا ہوا میزان چوک پہنچے گا جہاں جلوس کے شرکاء نماز ظہرین کی ادائیگی کے بعد لیاقت بازار، پرنس روڈ، میکانگی روڈ سے ہوتا ہوا ایک بار پھر عملدار روڈ پہنچ کر اختتام پزیر ہوگا۔

جلوس کی گزرگاہوں کو سیل کردیا جائےگا اور کسی بھی غیر متعلقہ افراد کو داخلے کی اجازت نہیں ہوگی۔ میکانگی روڈ گوڑہ اسپتال سے لے کر مشن روڑ تک بند ہوگا۔ منان چوک سے آگے میزا ن چوک کی جانب ٹریفک بند ہوگی۔

مری آباد اور ہزارہ ٹاؤن کی جانب جانے والی شاہرائیں بھی سیل ہوں گی جبکہ ان شاہراوں کے علاوہ شہر کی دیگر شاہرائیں عام ٹریفک کے لئے کھلی ہوں گی۔

کوئٹہ

MUHARRAM UL HARAM

Tabool ads will show in this div