بلوچستان کے ڈاکٹروں کو بدنام کرنے کی کوشش کی جارہی ہے،ڈاکٹر تنظیمیں

وائرل ویڈیو کوئٹہ کے کسی اسپتال کے نہیں، ڈاکٹرآفتاب کاکڑ

کوئٹہ میں ڈاکٹر تنظمیوں نے سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ویڈیو پرتشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ویڈیو کوئٹہ کے نہیں بلکہ برازیل کے کسی اسپتال کی ہے۔

کوئٹہ میں پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن کے صوبائی صدر ڈاکٹر آفتاب کاکڑ، ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کے چیئرمین اور پیرامیڈیل اسٹاف کےعہدیداروں نے پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ سوشل میڈیا پر وائرل ویڈیو کو سازش کے تحت کوئٹہ کے ڈاکٹروں کے ساتھ منسوب کیا گیا۔

شرکاء کا موقف تھا کہ چیف سیکرٹری بلوچستان نے بھی بغیر انکوائری کے واقعے کی تحقیقات کا حکم دیا ہے جو قابل مذمت ہے۔

عہدیداروں کا کہنا تھا کہ چند دن پہلے بھی کوئٹہ کے نجی اسپتال میں ایک واقعہ رونما ہوا تھا جس میں ایک ذہنی مرض میں مبتلا خاتون نے ڈاکٹر پر دوران علاج نازیبا حرکت کرنے کا الزام لگایا تھا جو بعد میں غلط ثابت ہوا۔

انہوں نے کہا کہ ڈاکٹرتنظمیوں نے واقعے کی تحقیقات کی اور اسپتال کی سی سی ٹی وی ویڈیوز بھی دیکھی ہیں،ایف آئی اے کا سائبرکرائم سیل بھی واقعے کی تحقیقات کررہا ہے، خاتون نے بعد میں معافی بھی مانگی ہے لیکن سازش کے تحت جعلی ویڈیو بناکر بلوچستان کے ڈاکٹروں کو بدنام کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

ڈاکٹرتنظیموں نے مطالبہ کیا کہ ایف آئی اے اور دیگر حکومتی ادارے واقعے کی تحقیقات کریں اور جعلی ویڈیو کو وائرل کرنے میں ملوث افراد کو گرفتارکرکے سخت سزا دی جائے۔

بلوچستان

young doctors association

pakistan medical association

Tabool ads will show in this div