پاکستان میں غذائی اشیاء کی قیمتوں میں 5سے30فیصد تک اضافہ،عالمی بینک

پاکستان میں غذائی اشیاء کی قیمتوں میں5سے30فیصد تک اضافہ،عالمی بینک

عالمی بینک نے ورلڈ فوڈ سیکیورٹی اپ ڈیٹ رپورٹ جاری کردی ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا کہ روس اور یوکرائن جنگ نےغریب ممالک کو خوراک، قرضوں کے بحران میں مبتلا کردیا ہے۔

رپورٹ کےمطابق افریقی ممالک کو 40 سال کی بدترین غذائی قلت کا سامنا ہے اور پاکستان سمیت کئی کم آمدن والے ممالک میں مہنگائی ڈبل ڈیجیٹ میں ہے۔

عالمی بينک نےبتایا ہے کہ پاکستان دنیا کے ان ممالک میں شامل ہے جہاں غذائی قیمتوں میں زیادہ اضافہ ہوا اور مختلف غذائی اشیاء کی قیمتیں 5 سے 30 فیصد تک بڑھ گئیں۔

عالمی بينک کےمطابق پاکستان میں گزشتہ مالی سال کے دوران خوراک 25.9 فیصد تک مہنگی ہوئی اور کم اور متوسط آمدن والے تمام ممالک میں خوراک کی مہنگائی زیادہ ہے۔

یہ بھی بتایا گیا کہ پچھلے 2 ہفتوں سے زرعی مصنوعات سمیت عالمی قیمتیں مستحکم ہیں اور روس اور یوکرائن کے درمیان 2 کروڑ ٹن گندم جاری کرنے کا معاہدہ طے پا گیا ہے۔

world bank

WORLD FOOD SECURITY

Tabool ads will show in this div