پاکستان کا روس سے گندم کی خریداری کا فیصلہ

اگرروس زیادہ قیمت مانگے تو پیشکش منسوخ کردی جائے

اقتصادی رابطہ کمیٹی نے روس سے 390 ڈالر فی میٹرک ٹن کے حساب سے گندم خریداری کی پیش کش کرنے کی منظوری دے دی۔وزارت غذائی تحفظ کو ہدایت کی گئی ہے کہ اگرروس زیادہ قیمت مانگے تو پیشکش منسوخ کردی جائے۔

روس سے سستی گندم خرینے کی جانب اہم پیش رفت ہوئی ہے۔ اقتصادی رابطہ کمیٹی نے منظوری دے دی کہ حکومتی سطح پرگندم 390 ڈالر فی میٹرک ٹن کے حساب سے خریدنے کی پیشکش کی جائے۔

یہ بھی کہا گیا کہ اگرروس اس سے زیادہ قیمت دینے کا مطالبہ کرے تو390 ڈالرکی پیشکش بھی منسوخ کردیں۔

ای سی سی اجلاس میں بتایا گیا کہ 28 مئی کو وفاقی کابینہ نے 30 لاکھ میٹرک ٹن گندم درآمد کرنے کی منظوری دی تھی۔ ٹریڈنگ کارپوریشن آف پاکستان نے خریداری کی کوششیں شروع کیں توروس نےابتدا میں410 ڈالر فی میٹرک ٹن کی پیشکش کی تھی۔

اس سلسلے میں وزیراعظم کےمعاون خصوصی طارق فاطمی کی سربراہی میں قائم کمیٹی نے روسی سفارت خانے سے مذاکرات کیے جس پر روس پہلے405 ڈالر اور پھر 400 ڈالر فی میٹرک ٹن کی پیشکش پر آ گیا تھا۔

وزارتِ غذائی تحفظ نے وزارت تجارت کی سفارش کے مطابق روس کو فی میٹرک ٹن 399.50 ڈالر دینے کی تجویز دی جس پر وزارت خزانہ نے بتایا کہ عالمی مارکیٹ میں گندم سستی ہورہی ہے۔

ای سی سی نے390 ڈالرفی میٹرک ٹن کے حساب سے گندم خریداری کی پیشکش کا فیصلہ کیا۔

ECC MEETING

UKRAINE RUSSIA WAR

Import of wheat

Tabool ads will show in this div