وزیراعلیٰ پنجاب کے پرنسپل سیکریٹری کی تعیناتی عدالت میں چیلنج

تعیناتی کالعدم قرار دینے کی استدعا
<p>فائل فوٹو: لاہور میں پنجاب اسمبلی کے باہر کا منظر</p>

فائل فوٹو: لاہور میں پنجاب اسمبلی کے باہر کا منظر

وزیراعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الہیٰ ( Punjab Assembly ) کے پرنسپل سیکریٹری محمد خان بھٹی کی تعیناتی کو لاہور ہائی کورٹ میں چیلنج کردیا گیا ہے۔

شہری اختر علی کی جانب سے جمعہ 5 اگست کو لاہور ہائیکورٹ میں آئینی درخواست دائر کی گئی۔ درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ پرنسپل سیکریٹری برائے وزیراعلیٰ پنجاب کی تعیناتی آئین اور قانون کی خلاف ورزی ہے۔ قانون کے مطابق ایک سروس کیڈر کا افسر دوسرے سروس کیڈر میں تعینات نہیں کیا جا سکتا۔

درخواست گزار کا یہ بھی کہنا تھا کہ محمد خان بھٹی کی بطور پرنسپل سیکریٹری تعیناتی کے دو نوٹی فیکیشن جاری کئے گئے۔ ٹرانسفر پوسٹنگ کا پہلا سادہ نوٹی فیکیشن، دوسرا نوٹی فیکیشن ڈیپوٹیشن پر تعیناتی کا کیا گیا۔

دونوں نوٹی فیکیشن پرویزالہیٰ کے بطور وزیراعلیٰ پنجاب حلف اٹھانے سے پہلے ہی جاری کئے گئے۔

شہری کا یہ بھی کہنا تھا کہ ایک غیر تعلیم یافتہ شخص کو انتہائی پڑھے لکھے سرکاری افسران کا سربراہ لگا دیا گیا ہے، عدالت سے استدعا ہے کہ لاہور پرنسپل سیکریٹری برائے وزیراعلیٰ پنجاب محمد خان بھٹی کی تعیناتی کالعدم قرار دی جائے۔

Tabool ads will show in this div