ملک بھر میں ادویات کی شدید قلت پیدا ہوگئی

ہارٹ اٹیک، سرطان، شوگر، یرقان سمیت 90 سے زائد ادویات مارکیٹ سےغائب

لاہور سمیت ملک بھر میں ادویات کی شدید قلت پیدا ہوگئی ہے۔ ہارٹ اٹیک، سرطان، شوگر، یرقان سمیت 90 سے زائد ادویات مارکیٹ سےغائب ہیں۔

لاہور سمیت ملک کے کئی شہروں میں جان بچانے والی 90 سے زائد ادویات کی مارکیٹ میں شدید قلت ہے۔ ہارٹ اٹیک، بلڈ پریشر، شوگر کی ادویات کی میڈیکل اسٹورز پر قلت ہے۔

میڈیکل اسٹورز پر سرطان، پیلے یرقان، تپ دق کی دوائیاں بھی میسر نہیں ہیں جب کہ انستھیزیا اور مختلف سرجریز میں استعمال ہونے والی ادویات کی بھی قلت ہے۔ بخار اور سردرد کے لیے پیراسٹامول، کھانسی کے شربت بھی دستیاب نہیں ہیں۔

پاکستان فارماسوٹیکل مینوفیکچرز ایسوسی ایشن کے مطابق خام مال مہنگا ہونے کے باعث ادویات بنانا ممکن نہیں اور اگرحکومت ادویات مہنگی کرے تومارکیٹ سے قلت ختم ہوجائے گی۔

فارماسوٹیکل کمپنیوں نے قیمتوں میں اضافے کا مطالبہ کردیا۔چیرمین پاکستان فارماسوٹیکل مینوفیکچرز قاضی منصور دلاورنے بتایا کہ ایک سال میں ڈالر کی ریٹ کم تھا اور اب کافی زیادہ ہے۔ انھوں نے بتایا کہ ادویات میں استعمال ہونے والا مٹیریل بھی مہنگا ہوا ہے تاہم ادویات کی قیمتیں بڑھانے کا اختیار بھی نہیں ہے جس کی وجہ سے قلت پیدا ہورہی ہے۔

ادویات نہ ملنے پر شہری شدید پریشان ہیں۔ ادویات کی قلت ختم کرنے پروزیراعظم پاکستان نے کمیٹی تشکیل دیتے ہوئے جلد معاملات حل کروانے کی ہدایت کی ہے۔

Tabool ads will show in this div