کے الیکٹرک کا پاور پلانٹ بن قاسم تھری کا گیس ٹربائن تکنیکی خرابی کے باعث بند

یونٹ سے کراچی کو 450 میگا واٹ بجلی کی فراہمی معطل ہوگئی

کے الیکٹرک کے جدید ترین پاور پلانٹ بن قاسم تھری کا 450 میگا واٹ یونٹ نمبر ون کا گیس ٹربائن فنی خرابی کے باعث بند ہوگیا۔

رپورٹ کے مطابق یونٹ کی مرمت اور آپریشنل ہونے میں 3 سے 4 ماہ کا عرصہ لگے گا، بن قاسم پاور پلانٹ تھری کا یونٹ کمیشننگ اور کارکردگی ٹیسٹ کے بعد 5 جولائی سے 450 میگاواٹ بجلی پیدا کررہا تھا۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ گیس ٹربائن کے تمام پارٹس بیرون ملک سے درآمد کئے جائیں گے، جن کی مالیت اربوں روپے ہے۔

ترجمان کے الیکٹرک جاری بیان میں کہنا ہے کہ کے الیکٹرک کا بن قاسم پاور اسٹیشن 3 کا یونٹ ایک فالٹ کے باعث عارضی طور پر غیرفعال ہوا ہے، اس فالٹ کی شناخت سیمینز اے جی (Siemens AG) کی جانب سے کئے جانے والے کمیشننگ فیز کے آخری مراحل کے ایک ٹیسٹ کے دوران ہوئی، ٹربائن کی مرمت میں 6 سے 8 ہفتے لگیں گے۔

ترجمان کے مطابق ہاربن الیکٹرک اور سیمینز کے نمائندوں کی جانب سے ابتدائی تحقیقات کا آغاز کیا جاچکا ہے، حالانکہ پلانٹ اب بھی ٹیسٹ رن پر ہے، کے الیکٹرک کی جانب سے صورتحال کا مستقل جائزہ لیا جارہا ہے، ابتدائی تحقیقات اس بات کی تصدیق کرتی ہیں کہ فالٹ گیس ٹربائن کے ایک خاص حصے میں آیا۔

ترجمان کے الیکٹرک کا دعویٰ ہے کہ متاثرہ یونٹ پچھلے مہینے متعدد بار مکمل لوڈ پر چل چکا ہے، شہر میں بجلی کی سپلائی ویب سائٹ پر موجود 30 جون کے شیڈول کے مطابق ہے اور لوڈ شیڈنگ میں اضافہ نہیں کیا گیا ہے۔

کراچی

K ELECTRIC

Bin Qasim power plant

Tabool ads will show in this div