پیپلزپارٹی ،ن ليگ کے فنڈنگ کيسزکا فيصلہ ہمارے ساتھ سُناياجائے،عمران خان

معیشت بہترکرنی ہے تو الیکشن کےعلاوہ کوئی راستہ نہیں، چیئرمین تحریک انصاف

چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کا کہنا ہے کہ فنڈنگ کیس کا فیصلہ سنانے پر اعتراض نہیں مگر الیکشن کمیشن پیپلزپارٹی اور ن ليگ کے فنڈنگ کيسزکا فيصلہ ہمارے ساتھ سُنا ئے۔

ایک انٹرویو میں عمران خان کا کہنا تھا کہ عارف نقوی کو20،25 سال سے جانتاہوں، عارف نقوی نے شوکت خانم کيلئے بھی 9ارب اکٹھا کيے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ عارف نقوی پی ٹی آئی کے لئے دبئی اور برطانيہ ميں فنڈ ريزنگ کی اور سارا پيسہ بينکنگ چينل سے آيا چھپا کر نہيں لائے۔ پی ٹی آئی کےتمام آڈٹ اکاؤنٹس اعلانيہ ہيں۔

سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ یہ سیاسی فنڈ ریزنگ ہوتی ہے اور یہی دنیا بھر میں مروجہ طریقہ کار ہے۔ مزید کہا ہمارے پاس 40 ہزار ڈونر کا ریکارڈ موجود ہے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ ن اور پیپلزپارٹی کے پاس پارٹی فنڈ کا کوئی ریکارڈ ہی موجود نہیں ہے۔ یہ بڑے بزنس مینوں کو ساتھ ملاکر فنڈ اکھٹا کرتے ہیں اور حکومت میں آکر پیسے بناتے ہیں۔ ان کے پاس کوئی منی ٹریل موجود نہیں ہے۔

چیئرمین تحریک انصاف کا کہنا تھا کہ نواز شریف نے تو پارٹی کو منی لانڈرنگ کےلیے استعمال کیا جبکہ پیپلزپارٹی نے امریکا میں سفارتخانے کے پیسے سے فنڈ لیے ہیں، پیپلزپارٹی اور ن لیگ سمیت ان پارٹیوں کے کیسز بھی سامنے آنے چاہئیں۔

عمران خان نے کہا کہ الیکشن جتنی جلدی ہوں گے اتنے ملک کیلئے بہتر ہوں گے الیکشن ہارنے کا خوف ہےاس لیےیہ لوگ الیکشن نہیں چاہتے ملک کو بچانا ہے، معیشت بہترکرنی ہے تو الیکشن کےعلاوہ کوئی راستہ نہیں۔

انہوں نے کہا کہ اس وقت پاکستانیوں کیلئے مشکلات ہیں اور یہ بڑھتی جائیں گی یہ ٹولہ جب تک اقتدار میں رہےگا اپنی سیاست دفن کرتاجائےگا پاکستان کیلئے جتنی جلدی ممکن ہو سکے الیکشن ہونے چاہئیں۔

IMRAN KHAN

Foreign Funding Case

Erum Asif Jul 31, 2022 06:34am
دجل اور فریب کا ایک گہرا پردہ ہے جو ملکی سیاست کے منظر نامے پر پڑا ہے، روزانہ کوئی نہ کوئی پارٹی لیڈر ایک نئے جھوٹ اور فریب کے ساتھ عوام کے سامنے آتا ہے اور ناداں عوام اس کے پیچھے چل پڑتی ہے۔۔اللہ تعالی ہی رحم فرمائیں اس ملک کے حالات پر۔۔
Tabool ads will show in this div