بارشوں کے بعد بلوچستان میں پیٹ اور آنتوں کی وباء پھیل گئی

ژوب میں ڈائریا سے سات افراد جاں بحق ہوگئے

**بلوچستان میں مون سون کی بارشوں اور سیلابی ریلوں سے متاثرہ علاقوں میں پیٹ اور آنتوں کی بیماریاں پھیلنے لگیں، 7 افراد ڈائریا سے جاں بحق ہوگئے۔ **

بلوچستان میں ہونے والی حالیہ طوفانی بارشوں اور سیلابی ریلوں کی تباہی سے 69 افراد زندگی کی بازی ہار چکے ہیں، اور 49 افراد زخمی بھی ہوئے۔

پی ڈی ایم اے کے مطابق صوبے میں بارشوں کی تباہی میں ایک ہزار مکانات مہندم ہوئے، اور ہزاروں ایکڑ زرعی زمین پر کھڑیں فصلیں تباہ ہوگئیں۔

وزیراعلیٰ بلوچستان کے مطابق وچستان میں بعض ڈیمز کو نقصان پہنچا ہے، ڈیمز کے نقصانات میں نقائص سامنے آئے تو ذمہ داروں کے خلاف کاروائی کی جائے۔

وزیراعلیٰ نے کہا کہ صوبے میں اس وقت 30 ہزار خیموں کی فوری ضرورت ہے، لیکن این ڈی ایم اے کی جانب سے صرف 300 خیمے فراہم کیے گئے ہیں، بارشوں سے بلوچستان سب سے زیادہ متاثرہوا ہے، وفاق مشکل گھڑی میں ساتھ دے۔

دوسری طرف بلوچستان میں مون سون کی بارشوں اور سیلابی ریلوں سے متاثرہ علاقوں میں پیٹ اور آنتوں کی بیماریاں پھیلنے لگی ہیں۔

عالمی ادارہ صحت کے مطابق بلوچستان کے 16 اضلاع میں ڈائریا کی وباء پھیلی ہوئی ہے۔ اور صرف ژوب میں گزشتہ 9 دنوں میں 7 افراد جاں بحق اور 1100 سے زائد متاثر ہوچکے ہیں۔

بلوچستان

Monsoon Rain

Tabool ads will show in this div