کراچی میں بارشوں کے باعث بجلی بند، کے الیکٹرک کی وضاحت

متاثرہ علاقوں میں پانی اترتے ہی بجلی بحالی کا عمل شروع کر دیا جائے گا، ترجمان کے الیکٹرک

عید الاضحیٰ کے دوسرے روز کراچی کے بیشتر علاقوں میں بجلی کی فراہمی بند ہے جب کہ کے الیکٹرک نے اس کی وجہ بارش کا پانی قرار دیا ہے۔

اپنے بیان میں ترجمان کے الیکٹرک نے کہا کہ کراچی کے لیے یہ اب تک سب سے شدید بارش کی لہر رہی ہے جس سے شہر میں ہنگامی صورتحال پیدا ہوئی ہے، محکمہ موسمیات کے مطابق شہر میں 380 ملی میٹر سے زائد بارش ہوئی ہے۔

ترجمان کے الیکٹرک کا کہنا ہے کہ شہر کے بیشتر علاقوں کو 1900 میں سے تقریباً 1600 سے زائد فیڈرز سے بجلی کی فراہمی جاری ہے، مسلسل بارش اور پانی کی نکاسی نا ہونے کے سبب ‏تقریباً 300 فیڈرز حفاظتی و تکنیکی بنیاد پر بند ہیں۔

ترجمان کے الیکٹرک بارش رکتے ہی بجلی کی بحالی کا عمل تیزی سے جاری ہے، جن جن علاقوں میں کھڑے ہوۓ پانی کی سطح محفوظ حد پر پہنچ رہی ہے، کلیئرنس کے بعد ان علاقوں کو بحال کیا جارہا ہے۔

کے الیکٹرک ترجمان نے کہا کہ متعلقہ اداروں کے مشکور ہیں جو پانی کی نکاسی کو یقینی بنانے میں مدد کر رہے ہیں، تمام متعلقہ اداروں اور انتظامیہ سے مستقل رابطے میں ہیں تاکہ معاونت سے صارفین کو ریلیف پہنچایا جائے، چند علاقوں میں پانی کی نکاسی نہ ہونے کے باعث بجلی کی بحالی کے عمل میں دشواری کا سامنا ہے،چند علاقوں میں خطرناک سطح پر پانی کھڑا ہونے کی وجہ سے بحالی میں وقت درکار ہوسکتا ہے۔

ترجمان کے الیکٹرک کا کہنا تھا کہ جاری مون سون بارشوں کے باعث شہریوں سے التماس ہے کہ خصوصی احتیاط جاری رکھیں، برقی آلات کے استعمال میں احتیاط کریں۔ بارش کے دوران اور کھڑے پانی میں پانی کی موٹر جیسے برقی آلات کا غیر محفوظ استعمال حادثات کا سبب بن سکتا ہے۔

ترجمان کےالیکٹرک نے کہا کہ ‏شہری ٹوٹے ہوئے تاروں، ٹی وی انٹر نیٹ کیبلز ، بجلی کے کھمبوں اور پی ایم ٹیز سے دور رہیں، غیر قانونی ذرائع سے بجلی کا حصول اور کنڈے جان لیوا حادثات کا سبب بنتے ہیں، ‏کے الیکٹرک کے صارفین و شہریوں سے درخواست ہے کہ بجلی کی سپلائی سے متعلق ایمرجنسی شکایات کے لیے فون 118 پر فوری رابطہ کریں۔

Monsoon Rain

rain in karachi

Tabool ads will show in this div