پاکستان نے بھارتی فوج کا بے بنیاد ڈوزيئر مسترد کر دیا

نام نہاد ڈوزيئر غلط معلومات پر مبنی ہے،ترجمان دفتر خارجہ

ترجمان دفترخارجہ کا کہنا ہے کہ بھارتی فوج کے نام نہاد ڈوزیئر کی رپورٹس کاجائزہ لیا گيا، ڈوزیئرمیں پاکستان کے خلاف بے بنیادالزامات لگائے گئے۔

ترجمان دفترخارجہ عاصم افتخار کا کہنا ہے کہ پاکستان جھوٹے اور خود ساختہ ڈوزيئر کو یکسر مسترد کرتا ہے۔

عاصم افتخار کا کہنا ہے کہ بھارتی فوج کی جانب سے دہشتگردی میں پاکستان کو ملوث کرنے کی ناکام کوشش کی گئی، نام نہاد ڈوزيئرجعلی اور غلط معلومات پر مبنی ہے۔

ترجمان کے مطابق ڈوزيئر ان اداروں نے گھڑا جو مقبوضہ کشمیر میں بھارتی دہشتگردی سے توجہ ہٹانا چاہتے ہیں۔

خیال رہے کہ مقبوضہ کشمیر اور بھارت میں مسلمانوں پر ظلم وستم کے پہاڑ توڑے جانے کا سلسلہ نہ صرف جاری ہے بلکہ حالیہ دنوں میں اس میں اضافہ ہوتا جارہا ہے۔

مقبوضہ کشمیر میں رواں برس کے دوران قابض بھارتی فوج کے ہاتھوں جام شہادت نوش کرنے والے نوجوانوں کی تعداد 100 ہوگئی ہے۔

مقبوضہ جموں و کشمیر میں قابض بھارتی فوج کی بربریت کا سلسلہ جاری ہے۔ یہ سلسلہ اگست 2019 میں بھارتی آئین میں کشمیر کی خصوصی حیثیت کے خاتمے کے بعد مزید تیز ہوگیا ہے۔

قابض بھارتی فوج مقبوضہ وادی میں ظلم و بربریت کا اندازہ صرف اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ کٹھ پتلی حکام ہی 2022 میں اب تک 100 نوجوانوں کو مختلف واقعات میں ہلاک کرنے کا دعویٰ کررہی ہے۔

مقبوضہ کشمیر کی کٹھ پتلی پولیس کے آئی جی وجے کمار نے کہا ہے کہ 12 جون تک رواں برس وادی کے مختلفر علاقوں میں 100 نوجوانوں کو شہید کیا گیا ہے جب کہ گزشتہ برس 6 ماہ میں 50 نوجوانوں نے جام شہادت نوش کیا تھا۔

Foreign Office Spokesperson

Tabool ads will show in this div