سلیمان شہباز کا عمران اسماعیل کو ایک ارب روپے ہرجانے کا نوٹس

وزیراعظم کے بیٹے نے سولر کاروبار سے متعلق الزام کو بے بنیاد قراردیدیا

وزیراعظم شہباز شریف کے بیٹے سلیمان شہباز نے سابق گورنر سندھ عمران اسماعیل کو ایک ارب روپے ہرجانے کا نوٹس بھجوا دیا۔

سابق گورنر سندھ عمران اسماعیل نے سلیمان شہباز پر سولر پینل کے کاروبار سے متعلق الزام عائد کیا تھا، جس پر وزیراعظم شہباز شریف کے صاحبزادے نے پی ٹی آئی رہنماء کو ایک ارب روپے ہرجانے کا نوٹس بھجوادیا۔

بھیجے گئے قانونی نوٹس میں کہا گیا ہے کہ عمران اسماعیل نے سولر کنٹریکٹ کے حوالے سے بے بنیاد الزامات لگائے۔

سلیمان شہباز نے عمران اسماعیل کو ایک ارب روپے ہرجانے کا نوٹس بھیجتے ہوئے 14 روز میں معافی مانگنے کا مطالبہ کیا ہے۔

سابق گورنر کو بھیجے گئے نوٹس میں کہا گیا ہے کہ اگر عمران اسماعیل نے معافی نہ مانگی تو قانونی کارروائی کا حق رکھتا ہوں۔

قبل ازیں شریف گروپ آف کمپنیز نے بھی عمران اسماعیل کے سلیمان شہباز پر الزامات کو مسترد کرتے ہوئے انہیں لغو اور بے بنیاد قرار دیا تھا۔

دوسری جانب پاکستان تحریک انصاف کے رہنماء اور سابق گورنر سندھ عمران اسماعیل کہتے ہیں کہ سولر کی بات کرنے پر سلیمان شہباز نے ہتک عزت کا نوٹس بھیج دیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ترک وزیراعظم سے ملنے جارہے ہیں، آپ ہیڈ ٹیبل پر بیٹھے ہوئے ہیں اور واپسی پر سولر کا کام شروع کردیا، یہ باتیں ہوا میں نہیں جائیں گی۔

Imran Ismael

SULEMAN SHEHBAZ SHARIF

Tabool ads will show in this div