ظہیر سے جدا کرنے کی کوشش کی تو انتہائی اقدام اٹھاؤں گی، دعا زہرا کی والدین کو دھمکی

کسی صورت ظہیر کو چھوڑ کر کراچی نہیں جاؤں گی، دعا زہرا

کراچی سے لاہور جاکر پسند کی شادی کرنے والی دعا زہرا نے کہا ہے کہ اگر اس کے والدین نے مداخلت کی یا ظہیر سے جدا کرنے کی کوشش کی تو انتہائی اقدام اٹھادوں گی لیکن ظہیر کو چھوڑ کر کراچی نہیں جاؤں گی۔

سماء کو دیئے گئے انٹرویو میں دعا زہرا نے کہا کہ اگر میڈیکل بورڈ کی رپورٹ کی بنیاد پراسے ظہیر سے الگ کیا گیا تو وہ کسی صورت والدین کے پاس نہیں جائے گی۔

دعا زہرا نے کہا کہ والدین چھوٹی چھوٹی باتوں پر اسے مارتے پیٹتے تھے، والدین کے پاس گئی تو وہ یقیناْ مار دیں گے۔ دارالامان بھی نہیں جانا چاہتی ، اپنے شوہر ظہیر کے ساتھ ہی رہنا چاہتی ہے۔

دعا زہرا کا کہنا تھا کہ میں بالغ ہوں، میرا نکاح جائز ہے، ظہیر کے بغیر رہ ہی نہیں سکتی، ظہیر سے الگ ہونے کا سوچتی بھی ہوں تو دل گبھرانا شروع ہوجاتا ہے۔

ظہیر کا کہنا تھا کہ مجھے اپنی عدالتوں پر پورا یقین ہے، وہ ہمیں انصاف ضرور دیں گے۔ میں دعا زہرا کے لیے جیل بھی جانے کے لیے تیار ہوں۔

عید پر کیا خریدا

عید کی تیاریوں کے حوالے سے دعا زہرا نے کہا کہ ظہیر نے اسے جیولری دلا کر دی ہے لیکن ابھی کپڑے خریدنا باقی ہیں۔

دعا کا والدین کو پیغام

دعا زہرا نے اپنے والدین کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ میں نے نکاح کیا ہے کوئی گناہ نہیں کیا کہ وہ عدالتوں میں ہمیں گھسیٹ رہے ہیں۔

دعا کی چیف جسٹس سے اپیل

دعا زہرا نے کہا کہ وہ چیف جسٹس ، وزیر اعظم ، وزیر اعلیٰ سندھ اور پنجاب سے اپیل کرتی ہوں کہ مجھے جینے دیا جائے۔

لوگوں کے تاثرات کے حوالے سے ظہیر کا کہنا ہے کہ لوگوں کا خیال ہے کہ ہم ماں باپ کو نہیں دیکھ رہے، سب کچھ دیکھ رہے ہیں اور ہمیں سب پتہ ہے، لوگ سوشل میڈیا پر چلنے والوں باتیٓں سن اور دیکھ کر اپنی رائے قائم کررہے ہیں۔

DUA ZEHRA

dua zehra case

Tabool ads will show in this div