ملک میں مون سون بارشیں؛ کہیں سیلاب تو کہیں پانی کی قلت میں کمی

مختلف حادثات میں 10 سے زائد افراد جاں بحق، ندی نالوں میں سیلابی صورتحال

ملک بھر میں مون سون سیزن کا بھرپور انداز میں آغاز ہوگیا ہے جس کے نتیجے میں ملک بھر میں بارشیں ہوئی ہیں۔

محکمہ موسمیات کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹے کے دوران سندھ، بلوچستان، پنجاب، بالائی خیبر پختونخوا اور کشمیر میں تیز ہواؤں اور گرج چمک کے ساتھ بارشیں ہوئی۔

کہاں کتنی بارشیں ہوئی؟

محکمہ موسمیات کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں میں سے سب سے زیادہ بارش میرپور خاص میں ہوئی، جہاں 56 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی، اس کے علاوہ لسبیلہ میں 35، پڈعیدن 33، کوئٹہ (سٹی 30 اور سمنگلی10) جب کہ کراچی میں سرجانی ٹا ون 27، جامعۃ الرشید 23، گلشن حدید 16، نارتھ کراچی 13، قائد آباد 12، کیماڑی 08، سعدی ٹاؤن 06، فیصل بیس 05، ایئر پورٹ، جناح ٹرمینل، ڈی ایچ اے فیز ٹو 04 اور اورنگی ٹاؤن 03 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی۔

اس کے علاوہ تخت بائی 24، سکھر 23، اسلام آباد(ایئر پورٹ 23، گولڑہ 11، سیدپور02)، مستونگ 21، ٹنڈو جام 20، بونیر 17، روہڑی 11، مظفر آباد (ایئر پور ٹ 11، سٹی08)، پشین 10، گجرات 09، حیدر آباد 08، ٹھٹہ اور نارووال 07 اور خیرپور 06 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی۔

گزشتہ روز اورماڑہ ، خضدار، لورالائی، جیکب آباد، دادو، موہن جو داڑو، سکرنڈ، سیالکوٹ، مری ، رحیم یارخان ، حافظ آباد، دیر، کالام، بالا کوٹ، کوٹلی 05 اور گڑھی دوپٹہ میں بھی بارشیں ہوئیں۔

بلوچستان میں صورت حال انتہائی خراب

گزشتہ روز ہونے والی بارشوں سے سب زیادہ جانی نقصان بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں ہوا، جہاں مختلف حادثات و واقعات میں 7 افراد جاں بحق جب کہ 20 سے زائد زخمی ہوگئے۔

اس کے علاوہ مچھ میں 5 کانکُن سیلابی ریلےمیں بہہ گئے جن میں سے 2 کو بچا لیا گیا جب کہ 3کی تلاش جاری ہے، اسی طرح خضدار کے علاقے نال میں ایک نوجوان کو سیلابی ریلا بہا کر لے گیا۔

شدید بارش کے باعث برساتی ندی نالوں میں سیلابی صورت حال ہے جس کی وجہ سے کئی علاقوں کا زمینی رابطہ منقطع ہوگیا ہے۔

اسلام آباد میں جل تھل ایک

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد اور جڑواں شہر راولپنڈی میں موسلا دھار بارش سے کورنگ نالے میں شدید طغیانی کے باعث 4 بچے پھنس گئے، جنہیں ریسکیو کرلیا گیا۔

نالہ لئی میں طغیانی کے باعث سیلابی پانی نشیبی علاقوں میں داخل ہوگیا، ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لئے پاک فوج کے دستے گوالمنڈی پل پر پہنچ گئے۔

اسلام آباد کے علاقے کورنگ نالے میں بہہ جانے والے شخص کا تاحال کوئی پتہ نہ چل سکا، ریسکیو ٹیمیں بھی سرچ آپریشن ختم کرکے واپس چلی گئیں۔ لاپتہ شخص کورنگ نالے میں پھنس جانیوالے بچوں کو بچانے کیلئے پانی میں اترا تھا۔

اسسٹنٹ کمشنر کا کہنا ہے کہ محمود کی سلامتی کے حوالے سے تصدیق نہیں ہو پا رہی، وہ ریسکیو آنے سے پہلے بغیر حفاظتی اقدام نالے میں کود گیا تھا۔

حکومت پنجاب نے ضلعی انتظامیہ کیلئے گرانٹ جاری کردی

مون سون بارشوں سے ممکنہ نقصانات کے پيش نظر حکومت پنجاب نے ضلعی انتظامیہ کو 36 کروڑ کی ہنگامی گرانٹ جاری کردی۔ ہر ضلع کے ڈپٹی کمشنر کو ایک کروڑ روپے جاری کئے گئے ہیں۔ محکمہ خزانہ نے نوٹیفکیشن جاری کردیا۔

سندھ کی صورت حال

گزشتہ روز سب سے زیادہ بارش سندھ میں ہوئی، میرپورخاص اور لاڑکانہ ڈویژنز میں ہونے والی بارش نے پانی کی قلت کو کسی حد تک کم کردیا ہے جب کہ عمر کوٹ اور تھر پارکر میں بھی خشک سالی کا خدشہ کسی حد تک دور ہوگیا ہے۔

کراچی

کراچی کے مختلف علاقوں میں دوسرے روز بھی بارش ہوئی ہے تاہم محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ موسلادھار بارش کا امکان نہیں۔

محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ مون سون کا دوسرا اسپیل 8 جولائی کی رات یا 9 جولائی کی صبح شہر میں داخل ہوگا۔

شیر قلعہ نالہ غذر میں طغیانی، ہلاکتیں

غذر کے علاقہ شیر قلعہ نالے میں طغیانی کے باعث اونچے درجے کا سیلاب آگیا، 2 بچے اور 2 خواتین جاں بحق جب کہ متعدد افراد لاپتہ ہوگئے، ڈھائی سو سے زیادہ افراد بے گھر ہوچکے ہیں۔

مزید جانیے: کوٹلی اور غذر میں سیلاب کے باعث 4 افراد جاں بحق،متعدد لاپتہ

خیبرپختونخوا / آزاد کشمیر

وادی نیلم ميں شدید بارش کے بعد دریاؤں اور ندی نالوں میں سیلابی صورتحال ہے، جاگراں اور راوٹہ ناکہ میں سیلابی ریلے سے کئی رابطہ سڑکیں تباہ ہوگئيں۔

سیلابی ریلے میں ایک دکان، مویشیوں کا شیڈ، مچھلی فارم اور پن چکی بہہ گئے۔

یہ بھی جانیے: لینڈ سلائیڈنگ کے باعث ناران میں سیکڑوں سیاح پھنس گئے

کوٹلی آزاد کشمیر میں موسلا دھار بارش کا سلسلہ جاری ہے، تھلہیر کالونی سے گزرنے والا نالہ بپھر گیا، پانی گھروں میں داخل ہوگیا، بڑالی دربار کے مقام پر لینڈ سلائیڈنگ سے ایک نوجوان ملبے تلے دب کر جاں بحق اور ایک زخمی ہوگیا، ریسکیو ٹیموں کی جانب سے ملبہ ہٹانے کا کام جاری ہے۔

مانسہرہ شہر اور گرد و نواح میں رات بھر ساون کی لڑی جاری رہی، دم ڈلہ کے مقام پر لینڈ سلائیڈنگ سے ایم این جے روڈ پر ٹریفک کی آمد و رفت بند ہوگئی، سڑک کے دونوں اطراف گاڑیوں کی لائن لگ گئی، انتظامیہ کی جانب سے مشینری کے ذریعے ملبہ ہٹایا جارہا ہے۔

ایبٹ آباد، ہری پور اور گرد و نواح میں بھی تیز بارش ہوئی، ہری پور کے پنیان چوک کے مین نالے بند ہوگئے، شاہراہ قراقرم پر پانی جمع ہونے سے کئی گاڑیاں بند ہوگئيں۔

سوات اور مالاکنڈ ميں بھی برسات کے بعد موسم ٹھنڈا ہوگيا۔

Monsoon Rain

Tabool ads will show in this div