مناسک حج کا کل سے آغاز

اس سال 10 لاکھ عازمین حج ادا کرینگے

مناسک حج کا آغاز کل بروز بدھ 6 جولائی سے شروع ہو رہا ہے۔ 10 لاکھ عازمین حج کی سعادت حاصل کریں گے۔

سعودی ایجنسی کے مطابق کرونا وائرس کے بعد پہلی بار 10 لاکھ عازمین اس سال حج کی سعادت حاصل کریں گے، جن میں ساڑھے آٹھ لاکھ غیرملکی شامل ہیں۔ سعودی عرب میں عازمین حج کی آمد مکمل ہوچکی ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ دوران حج مسجد الحرام کو دن میں 10 بار دھویا جائے گا اور ہر بار 1 لاکھ 30 ہزار لیٹر جراثیم کُش محلول بھی استعمال کیا جائے گا۔

اس سال سعودی حکومت کی جانب سے 45 سال سے کم عمر کی خواتین کو بھی بغیر محرم حج کی اجازت دی گئی ہے۔

غلاف کعبہ

سعودی حکومت کا کہنا ہے کہ غلاف کعبہ اس بار 10 ذہ الحج کے موقعہ پر نہیں بلکہ یکم محرم کو تبدیل کیا جائے گا، خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی جانب سے بھی شاہی فرمان جاری کر دیا گیا ہے۔

غلاف کعبہ کی تبدیلی کا عمل گزشتہ کئی دہائیوں سے حج کے موقعہ پر کیا جاتا ہے تاہم رواں برس اس روایت کو تبدیل کیا جا رہا ہے اور غلاف کعبہ کو اب یکم محرم کو تبدیل کیا جائے گا۔

سعودی عرب میں اس سال غلاف کعبہ عید الاضحی کے روز کلید برداروں کے سربراہ کے حوالے کیا جائے گا اور یکم محرم 1444ھ کو نیا غلاف چڑھایا جائے گا۔

ڈاکٹرعبدالرحمان السدیس نے کہا کہ سعودی قیادت کی ہمیشہ کوشش رہتی ہے کہ مسجد الحرام اور مسجد نبوی کے حوالے سے خدمات کا معیار بلند سے بلند تر ہوتا رہے۔ سعودی قیادت خانہ کعبہ سے خاص عقیدت رکھتی ہے۔

اسی تناظر میں غلاف کعبہ کی تیاری، پرانے غلاف میں ترمیم، مرمت، تزئین اور پرانا غلاف اتار کر نیا غلاف کعبہ لگانے کا اہتمام کیا جاتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ دنیا بھر کے مسلمان خانہ کعبہ سے غیر معمولی عقیدت رکھتے ہیں۔ سعودی قیادت اس بات کو پسندیدگی کی نظر سے دیکھتی ہے۔

حرمین شریفین انتظامیہ کے سربراہ اعلی نے کہا کہ’ حرم شریف اور اس کے زائرین کا اعزاز و اکرام سعودی عرب کا فخر ہے۔

یاد رہے کہ اس سے قبل غلاف کعبہ ہر سال 9 ذی الحجہ کو اس وقت تبدیل کیا جاتا تھا جب اندرون مملکت اور بیرونی دنیا سے حج پر آنے والے میدان عرفات میں وقوف کے لیے جمع ہوتے تھے اور مسجد الحرام میں زائرین کی تعداد نہ ہونے کے برابر ہوتی تھی۔

SAUDIA ARABIA

HAJJ 2022

Tabool ads will show in this div