کیا پاکستانی فلم ‘لفنگے’عیدالاضحیٰ پر ریلیز نہیں ہوگی؟

وفاقی سینسر بورڈ نے نمائش کی اجازت دینے سے انکار کردیا

کامیڈی ہارر فلم ‘لفنگے’کو رواں برس عید الضحیٰ پر ریلیز کرنے اعلان کیا گیا تھا تاہم اب یہ خبر سامنے آئی ہے کہ سینسر بورڈ نے فلم کو سرٹیفیکیٹ دینے سے انکار کر دیا ہے۔

فلم کی کاسٹ میں جہاں سمیع خان اور سلیم معراج اور بہروز سبزواری جیسے منجھے ہوئے اداکار ہیں وہیں نازش جہانگیر، سلمان ثاقب عرف مانی، مبین گبول، اور اختر حسنین بھی اس فلم میں نظر آئیں گے۔

فلم کی کہانی چار دوستوں کے گرد گھومتی ہے جن کی زندگی میں ایک نئے انسان کی آمد سے سب کچھ الٹ پلٹ ہوتا جاتا ہے۔

انڈیپینڈنٹ اردو کی رپورٹ کے مطابق وفاقی سینسر بورڈ نے عیدالاضحیٰ پر ریلیز ہونے والی پاکستانی فلم ‘لفنگے’ کو سینسر سرٹیفیکیٹ دینے سے انکار کرتے ہوئے اس فلم کو پاکستانی سینما گھروں میں نمائش کے لیے ناموزوں قرار دیا ہے۔

سینٹرل بورڈ آف فلم سینسرز کے چیئرمین ارشد منیر نے کہا ہے کہ فلم لفنگے کے بارے میں سینسر کے وقت موجود تمام حاضر اراکین نے متفقہ طور پر فیصلہ دیا کہ یہ فلم اس قابل نہیں کہ اسے پاکستانی سینما گھروں میں نمائش کے لیے پیش کیا جاسکے۔

اس فلم میں بہت فحش زبان استعمال کی گئی ہے، متعدد مقامات پر ذومعنٰی جملے اور مکالمے استعمال کیے گئے ہیں، اور کئی جگہ پر جنسیت بھرے جملے بھی ہیں، جو شائستگی اور تہذیب کے مکمل منافی ہیں۔

کامیڈی فلم ‘لفنگے’ کے لکھاری اور ہدایت کار دونوں عبدالخالق خان ہیں جبکہ فلم کے پروڈیوسر طارق حبیب رند ہیں ۔

فلم کے ہدایتکار عبدالخالق خان نے کہا کہ انہیں اس فیصلہ سے افسوس ہوا ہے کیونکہ ان کی فلم میں ریاست یا مذہب مخالف کوئی چیز نہیں تھی، اگر گالیاں ہیں تو بیپ لگائی جاسکتی تھی، سین کٹ سکتے تھے، پابندی کیوں لگادی؟ وہ اسے صرف بالغوں کے لیے کا سرٹیفیکیٹ دے سکتے تھے۔

واضح رہے کہ اس فیصلے کے بعد فلم سازوں کے پاس فُل بورڈ میں اپیل کا حق موجود ہے۔

واضح رہے رواں برس عید الضحیٰ پر فہد مصطفیٰ اور ماہرہ خان کی فلم ‘قائداعظم زندہ باد’ اور ہمایوں سعید اور مہوش حیات کی فلم ‘لندن نہیں جاؤں گا’ بھی ریلیز کی جائے گی ۔

EID UL AZHA

Lafangey

EID UL AZHA 2022

Tabool ads will show in this div