پہلی بار 4 برس کی عمر میں مجھے جنسی ہراساں کیا گیا، نادیہ جمیل

نادیہ جمیل نے 2019 میں بتایا تھا کہ اُن میں بریسٹ کینسر کی تشخیص ہوئی ہے

اداکارہ نادیہ جمیل کئی مرتبہ اس بات کا اعتراف کرچکی ہیں کہ انہیں جنسی ہراسانی کانشانہ بنایا گیا جس کی وجہ سے وہ عمر بھر ذہنی اذیت میں مبتلا رہی ہیں۔

اداکارہ نے گزشتہ روز ایک بار پھر اپنے ٹوئٹ میں اپنے پچپن سے جوانی تک کی کئی تصاویر شیئر کرتے ہوئے اپنے ٹوئٹ میں لکھا کہ پہلی بار مجھے جنسی طور پر ہراساں کیا گیا تومیں صرف 4 سال کی تھی ، پھر 9اور پھر 17یا18 برس کی عمر میں ہراساں کیاگیا۔

اداکارہ نے یہ بھی بتایا کہ وہ جنسی ہراسانی کے بعد کن ذہنی الجھنوں اور اذیت میں مبتلا رہیں۔

انہوں نے لکھا کہ مجھے شدید ڈپریشن، اداسی، خوف اور شرمندگی سے لڑنے میں2 سال لگے، مجھے کوئی احساس نہیں تھا۔

اداکارہ نے سوالیہ انداز میں کہا ہے کہ میں اب کہاں ہوں؟ مجھے شفا ملی، میں ناصرف زندہ رہی بلکہ ترقی کی منازل بھی طے کیں۔

اداکارہ نے کہا کہ درد سے سکون کی طرف جانے کا ایک راستہ ہے ،آپ کبھی تنہا نہیں ہوتے۔

اداکارہ نادیہ جمیل کے ٹوئٹ پر سینئر اداکارہ ثمینہ پیر زادہ سمیت ٹوئٹر صارفین کی بڑی تعداد نے انکے ہمدردی اور محبت کا اظہار کیا۔

یاد رہے کہ نادیہ جمیل نے 2019 میں ایک ٹوئٹ کے ذریعے اپنے مداحوں کا اِس بات سے آگاہ کیا تھا کہ اُن کو بریسٹ کینسر کی تشخیص ہوئی ہے۔

نادیہ جمیل نے بین الاقوامی سطح پر اس مرض کا علاج کروایا جس کے بعد وہ بریسٹ کینسر کو شکست دینے میں کامیاب ہوئی تھیں۔

nadia jamil

Junaid Khan Jul 05, 2022 12:04pm
بس جی ﷲ رحم کرے ....اور گندے کاموں سے بچائے رکھیں آجکل تو گرل اینڈ بوائے فرینڈ کو فشین سمجھا جا رہا ہے....اسشیلی شہر میں یونیورسٹی جاء کر دیکھں ....آپ ہر طرف بے حیائی نظر آۓ گئ... اور ان سب کے ذمہ دار ما ں باپ ہیں جو بچوں کو ایسی جگہوں پر بھجتے ہیں....
Tabool ads will show in this div