سڈنی میں سیلاب کے باعث 10 ہزار افراد کو نقل مکانی کاحکم

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 200 ملی میٹر بارش ہوچکی ہے

آسٹریلیا کے سب سے بڑے شہر سڈنی میں شدید بارشوں اور سیلاب کے باعث 10 ہزار افراد کو نقل مکانی کی ہدایت کردی گئی ہے۔

سڈنی میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 200 ملی میٹر بارش ہوچکی ہے جس کے باعث تمام ڈیمز مکمل بھر گئے ہیں، جبکہ وارگمبا ڈیم سے 500 گیگا لیٹر یومیہ پانی کا اخراج ہورہا ہے۔

سیلاب کے باعث سڑکیں بند ہوچکی ہیں، شہریوں کو علاقے سے محفوظ مقامات پر منتقل کرنے کیلئے ریسکیو اہلکار کشتیوں کا استعمال کررہے ہیں۔

ریاست نیو ساوتھ ویلز میں ایمرجنسی سروسز کے وزیر اسٹیفن کوک کا کہنا ہے کہ اس وقت ہمیں ہنگامی صورتحال کا سامنا ہے جس میں لوگوں کی زندگیوں کو خطرات لاحق ہیں۔

انہوں نے کہا کہ سیلابی صورتحال لمحہ بہ لمحہ تبدل ہورہی ہے اور لوگوں کو مختصر نوٹس پر فوری نقل مکانی کیلئے تیار رہنا چاہئے، انہوں نے شہریوں سے درخواست کی کہ وہ غیر ضروری سفر سے گریز کریں۔

اتوار کو سڈنی کے سب سے بڑے ڈیم سے پانی کا اخراج شروع ہوگیا جس کی وجہ سے حکام تشویش کا شکار ہیں۔

حکام کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 83 ریسکیو سرگرمیاں انجام دی گئیں، سڈنی میں جان لیوا ہنگامی صورتحال ہے،آنے والے دنوں میں موسم میں مزید شدت آئے گی۔

Australia

Sydney

flood

weather

Tabool ads will show in this div