اسلام آباد جلسے سے گرفتار شخص کی معلومات شیئر نہیں کی گئیں، خیبر پختونخوا حکومت

سب سے زیادہ خسارے کا بجٹ پنجاب کا ہے

خیبر پختونخوا کے صوبائی وزیر تیمور جھگڑا کا کہنا ہے کہ گزشتہ روز پی ٹی آئی جلسے سے جو شخص گرفتار ہوا اس حوالے سے کہا جا رہا ہے وہ سرکاری ملازم ہے، حکومت نے اس حوالے سے کے پی سے کوئی معلومات شئیر نہیں کیں۔

خیبر پختونخوا ہاؤس میں کے پی وزراء کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے تیمور جھگڑا کا کہنا تھا کہ وفاق میں خیبر پختونخوا کے مسائل پر زیادہ بات نہیں ہوتی، کے پی کے حالیہ بجٹ میں جو اصلاحات ہوئیں اسے ہر جگہ سراہا گیا، کے پی وہ اقدامات کرتا ہے جو باقی صوبوں سے پہلے ہوتے ہیں، وفاقی حکومت نے ائی ایم ایف کے کہنے پر 800 ارب صوبوں سرپلس چھوڑنے کا کہا، کے پی کے کا 117 ارب سرپلس ہے۔

تیمور جھگڑا کا کہنا تھا کہ سندھ نے 33 ارب کا خسارے کا بجٹ دیا ہے، بلوچستان نے 145 ارب کے خسارے کا بجٹ ہے، کے پی کے نے نا خسارے اور نا سرپلس کا بجٹ دیا ہے، سب سے زیادہ خسارے کا بجٹ پنجاب کا ہے۔ اس موقع پر صحت کارڈ کا ذکر کرتے ہوئے صوبائی

صوبائی وزیر نے کہا کہ وفاقی حکومت جو قبائلی علاقوں کو صحت کارڈ کی سہولت دے رہی تھی اسے یکم جولائی سے ختم کر دیا گیا ہے، اگر کے پی حکومت صحت کارڈ اپنی طرف سے کرتی ہے تو پانچ ارب چاہئے ہونگے، پانچ ارب دئیے تو ہمارا بجٹ غیر متوازن ہو جائے گا۔

صوبائی وزیر کا کہنا تھا کہ عمران خان نے قبائلی علاقوں کا بجٹ 40 سے 130 ارب تک بڑھایا ہے، این ایف سی سے حصہ نا ملنے کی وجہ سے مختلف اضلاع کو کٹ لگا کر قبائلی علاقوں پر لگاتے ہیں۔

اس موقع پر کامران بنگش نے کہا کہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں بے پناہ اضافہ ہوا جس سے ہر طبقے کے لوگ متاثر ہوئے، پہلے چند روپے کے بڑھنے پر واویلا کیا جاتا تھا، اٹھارویں ترمیم میں ہے کہ جو صوبہ تیل پیدا کرے گا اسے زیادہ حصہ ملے گا، حکومت نے پیٹرولیم

لیوی کے پی میں لگا کر زیادتی کی ہے۔ پیٹرولیم لیوی لگا کر اٹھارویں ترمیم کی کھلم کھلا خلاف ورزی کی جا رہی ہے۔ یہ بڑے چیمپئن بنتے ہیں لیکن کے پی کے معاملے پر خاموش ہیں۔

خیبر پختونخوا میں ورک فرام ہوم کی پالیسی سے متعلق میڈیا کو آگاہ کرتے ہوئے کے پی وزرا کا کہنا تھا کہ کے پی حکومت جمعہ کو “ورک فرام ہوم” کا منصوبہ بنا رہی ہے جو اس ماہ جولائی سے شروع ہوگا، اس منصوبے کے تحت صوبے میں بجلی اور پیٹرول کی بچت ہوگی۔

ایک موقع پر گزشتہ روز ہفتہ 2 جولائی کو پریڈ گراؤنڈ اسلام آباد میں پی ٹی آئی جلسے سے گرفتار مسلح شخص سے متعلق واضح کرتے ہوئے کامران بنگش کا کہنا تھا کہ گزشتہ روز جلسے سے جو شخص گرفتار ہوا اس حوالے سے کہا جا رہا ہے وہ سرکاری ملازم ہے، وفاقی حکومت نے فی الحال کے پی حکومت سے کوئی معلومات شئیر نہیں کی ہیں۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز پی ٹی آئی جلسے سے مسلح شخص کو گرفتار کیا گیا تھا۔ جس نام سید غنی بنایا گیا ہے۔ مذکورہ شخص سے سرکاری کارڈ بھی برآمد ہوا، جس کے مطابق وہ کے پی محکمہ پبلک ہیلتھ انجینیرنگ کا سرکاری ملازم ہے۔

PTI

KPK

Kamran Bangash

TAIMUR KHAN JHAGRA

Tabool ads will show in this div