بین الاقوامی فضائی ٹکٹوں پر ایکسائز ڈیوٹی بڑھا دی گئی

اطلاق صرف کلب،بزنس،فرسٹ کلاس ٹکٹوں پرہوگا

ایف بی آر کی جانب سے جاری نوٹی فیکیشن کے مطابق بین الاقوامی فضائی ٹکٹوں پر عائد فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کا اطلاق یکم جولائی سے پہلے جاری ٹکٹوں پر نہیں ہوگا۔ واضح رہے کہ ایف بی آر کی جانب سے فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی 10 ہزار سے 50 ہزار روپے کردی گئی ہے

وزیراعظم شہباز شریف کی جانب سے بین الاقوامی فضائی ٹکٹوں پر فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی ( ایف ای ڈی ) کی وصولی کا نوٹس لیا گیا تھا، جس کے بعد فیڈرل بورڈ آف ریونیو ( ایف بی آر ) نے ایئر لائنز کو نیا مراسلہ ارسال کردیا ہے۔

ایف بی آر نے واضح کیا ہے کہ ایف ای ڈی کی نئی شرح کا اطلاق یکم جولائی سے پہلے جاری ٹکٹوں پر نہیں ہوگا۔

ایف بی آر کے مطابق فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی 10 ہزار سے بڑھا کر 50 ہزار روپے کردی گئی ہے۔ ایف ای ڈی کا اطلاق صرف کلب، بزنس اور فرسٹ کلاس ٹکٹوں پر ہوگا۔

فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی (ایف ای ڈی) فیڈرل ایکسائز ایکٹ ، 2005 کے سیکشن 3 کے تحت کلب، بزنس اور فرسٹ کلاس بین الاقوامی فضائی ٹکٹوں پر عائد ہوتی ہے۔

ایف بی آر کے جاری اعلامیے( جو کہ ذیل میں دیا گیا ہے ) میں کہا گیا ہے کہ رول 41 اے کا ذیلی رول (8) کہتا ہے کہ ایف ای ڈی کا اطلاق فضائی ٹکٹوں کے اجراء کے موقع پر ہوتا ہے۔ لہٰذا نئے فنانس بل 2022 کے تحت فضائی ٹکٹوں پر اضافی ایف ای ڈی کا اطلاق صرف ان بین الاقوامی فضائی ٹکٹوں پر ہوگا ، جن کا اجراء یکم جولائی، 2022 یا اس کے بعد ہوگا۔

واضح رہے کہ متعدد مسافروں کی جانب سے یہ شکایت منظر عام پر آئی تھی کہ ایئرلائن فرسٹ، بزنس اور کلب کلاس کے لیے 50 ہزار روپے ایف ای ڈی لے رہی ہیں، جب کہ ان کی بکنگ یکم جولائی سے قبل کی ہے، جس پر وزیراعظم کی جانب سے نوٹس لیا گیا تھا اور اس نئی ڈیوٹی جس میں رقم کو 5 گنا بڑھا دیا گیا ہے ، اس کا اطلاق یکم جولائی کے بعد جاری ہونے والے ٹکٹوں پر ہوگا۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کی جانب سے گزشتہ ماہ 10 جون کو دی گئی بجٹ تقریر میں اعلان کیا گیا تھا کہ مالی سال 23-2022 میں امیر افراد پر ٹیکس لگایا جائے گا اور کلب، بزنس اور فرسٹ کلاس میں فضائی سفر پر اضافی ایف ای ڈی لاگو ہوگی۔

اس کے بعد سے حکومت امیر طبقے سے پیسہ نکلوانے کے متعدد اقدامات کا بھی اعلان کرچکی ہے جس میں 4 کھرب 65 ارب روپے اضافی ریونیو حاصل کرنے اور آئی ایم ایف پروگرام کی بحالی کیلئے بجٹ خسارہ کم کرنے کیلئے 13بڑی صنعتوں پر 10 فیصد سپر ٹیکس کا نفاذ بھی شامل ہے۔

وزیراعظم کے دفتر سے اعلان کے بعد ایف بی آر نے بھی ایک وضاحت جاری کی جس میں اس بات پر روشنی ڈالی گئی تھی کہ یکم جولائی سے بجٹ 23-2022 کا اطلاق ہوگیا تھا۔

AIRLINE

FEDERAL EXCISE DUTY (FED)

FLIGHT TICKETS

Tabool ads will show in this div